Tuesday , June 19 2018
Home / شہر کی خبریں / گدوال کے زیڈ پی ٹی سی بی بھاسکر پر قسمت مہر بان

گدوال کے زیڈ پی ٹی سی بی بھاسکر پر قسمت مہر بان

ریلوے اسٹیشن پر حمال سے ضلع پریشد چیر مین بن گئے

ریلوے اسٹیشن پر حمال سے ضلع پریشد چیر مین بن گئے
محبوب نگر 6 جولائی ( سیاست نیوز) ضلع پریشد کے نویں چیر مین کی حیثیت سے گدوال کے زیڈ پی ٹی سی بنڈاری بھاسکر کا انتخاب عمل میں آیا ۔ ضلع پریشد کی اب تک کی تاریخ پر ایک طائرانہ نظر ڈالی جائے تو پہلے چیر مین اے رامچندر ریڈی منتخب ہوئے تھے جن کی میعاد یکم جنوری 1959 سے 31 مارچ 1964 تھی۔ دوسرے چیر مین کی حیثیت سے کے کے ریڈی یکم اپریل 1964 سے 8 فبروری 1976 تک کارگذار رہے ۔ تیسرے چیر مین وی نارائن ریڈی تھے ۔جنہوں نے 9 جولائی 1981 سے 14 فبروری 1983 تک خدمات انجام دیں چوتھے چیر مین کی حیثیت سے ڈی گوپال ریڈی 7 اپریل 1983 سے 8 جولائی 1986 تک کارگذار رہے ۔ 5 ویں چیر مین جے وینکٹیا نے 2 مئی 1987 سے 20 مئی 1992 کی معیاد مکمل کی ۔ چھٹے چیر مین آئی ینکٹ راو 2 مئی 1995 سے 19 مارچ 2000 تک کار گذار رہے ساتویں چیر مین کی حیثیت سے شریمتی سیتا دیا کر ریڈی 23 جولائی 2001 سے 22 جولائی 2006 تک کارگذار رہے ۔ 8 ویں چیر مین کی حیثیت سے کے دامودھر ریڈی 23 جولائی 2006 سے 20 جون 2011 تک اپنی خدمات انجام دیں۔ اس طرح نئی ریاست تلنگانہ میں ضلع محبوب نگر سے ٹی آر ایس امیدوار بنڈاری بھاسکر کو منتخب کیا گیا ۔ ان کا تعلق ایس سی طبقہ سے ہے۔ بی بھاسکر پیشہ سے حمال ہیں جو کرنول ریلوے اسٹیشن میںحمالی کیا کرتے تھے ۔ سیاسی میدان میںان کے عروج کا ستارہ ایسا چمکا کہ وہ زیڈ پی چیر مین کی کرسی پر براجمان ہوگئے ۔ وہ گدوال منڈل کے موضع کا کورارم کے نارائنا اور دیوما کے سپوت ہیں۔ غریب دلت خاندان سے ان کا تعلق رہا ہے وہ کرنول میں ساتویں جماعت تک تعلیم حاصل کی لیکن خاندان کی کفالت کیلئے اپنی چار ایکر زمین پر کاشت شروع کردی اسی دوران وہ کرنول ریلوے ویاگن میں حمالی کا کام کرنے لگے ۔ اس کے بعد وہ اپنے گاوں کا کولرارم سے اپنے والد نارائنا کو 1980 سے 1990 تک دو معیادوں کیلئے سرپنچ منتخب کرایا اور سیاسی قائدین سے اپنے روابطہ کو مضبوط بنایا اور گدوال حلقہ اسمبلی ٹی آر ایس انچارج کرشنا موہن ریڈی کے ساتھ سرگرم سیاست میں مصروف ہوگئے ۔ 2001 سے 2006 تک اپنے موضع کے سرپنچ منتخب ہوئے ۔ حالیہ منعقدہ زیڈ پی ٹی سی میں حلقہ گدوال جو ایس سی کیلئے محفوظ تھا مقابلہ کرتے ہوئے ٹی آر ایس امیدوار کی حیثیت سے کامیاب حاصل کی قسمت اُن پر بڑی مہربان تھی اور انہوں نے زیڈ پی چیر مین کے عہدہ پر قبضہ کرلیا ۔

TOPPOPULARRECENT