Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / گرام پنچایت اختیارات میں اضافہ کے لیے قانون سازی

گرام پنچایت اختیارات میں اضافہ کے لیے قانون سازی

سب کمیٹی کے اجلاس سے صدر نشین جے کرشنا راؤ کا خطاب
حیدرآباد ۔ 9 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : صدر نشین کابینی سب کمیٹی جے کرشنا راؤ نے کہا کہ دیہی علاقوں کو بنیادی سہولتیں فراہم کرنے اور گرام پنچایت کو مکمل اختیارات فراہم کرنے کے لیے نیا پنچایت راج قانون تیار کیا جارہا ہے ۔ ایم سی آر ایچ آر ڈی میں سب کمیٹی کا ایک اجلاس منعقد ہوا ۔ جس کی وزیر پنچایت راج جے کرشنا راؤ نے صدارت کی ۔ سب کمیٹی میں شامل دوسرے زراء پوچارام سرینواس ریڈی ، کے ٹی آر ، ٹی ناگیشور راؤ ، ایٹالہ راجندر ، ہریش راؤ ، اندرا کرن ریڈی کے علاوہ عہدیداروں میں نرسنگ راؤ ، وکاس راج ، سمیتا سبھروال ، نیتو کماری ، ریٹائرڈ آئی اے ایس چلپا ، سکریٹری محکمہ قانون نرنجن راؤ کے علاوہ دوسروں نے شرکت کی ۔ بعد ازاں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے صدرنشین سب کمیٹی جے کرشنا راؤ نے کہا کہ دیہی علاقوں میں نیا انقلاب لانے اور گاندھی جی کے خوابوں کی تعبیر کرنے کے لیے ریاست میں پنچایت راج کا نیا قانون لایا جارہا ہے ۔ اس قانون سے گاوں کی حالت تبدیل ہوگی ۔ شہری علاقوں کے طرز پر دیہی علاقوں میں بھی ترقی کے مساوی مواقع فراہم ہوں گے ۔ نئی قانون سازی کا اہم مقصد پنچایت راج اداروں کو مستحکم کرنا ترقیاتی و تعمیری کاموں میں انہیں مکمل اختیارات فراہم کرنے کے ساتھ فنڈز کی حد میں اضافہ کرتے ہوئے اس کے استعمال کے اختیارات حوالے کرنا ، سارے اختیارات سرپنچس کے حوالے کرنا ، عوامی خدمات سے پہلوتہی کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی کرنے کی گنجائش فراہم کی جارہی ہے ۔ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے انتخابات سے قبل تمام تانڈوں کو گرام پنچایتوں میں تبدیل کرنے کا وعدہ کیا تھا اس وعدے پر عمل آوری کو یقینی بنانے کے لیے کام کیا جارہا ہے ۔ نئے گرام پنچایت قائم کرنے کی حکمت عملی تیار کی جارہی ہے ۔ صاف صفائی ، صاف پینے کے پانی کی سربراہی ، اسٹریٹ لائٹس وغیرہ کے انتظامات پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے ۔ ان بنیادی ضرورتوں کی تکمیل کے لیے فنڈز کی کوئی قلت نہیں رہے گی کیوں کہ اس کے لیے بجٹ میں رقمی گنجائش فراہم کرنے کے اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ پنچایتوں کی ترقی کے لیے حکومت ٹھوس اقدامات کررہی ہے ۔ کم مصارف پر گرام پنچایت کے انتخابات کرانے کا بھی جائزہ لیا جارہا ہے ۔ گرام سبھا اور گرام پنچایتوں کے اجلاس کا انعقاد کرنے کے لیے جو وقت مقرر ہے اس پر بھی نظر ثانی کرنے کے لیے جائزہ لیا جارہا ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT