Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / گرمائی تعطیلات میں خدمات انجام دینے کا فیصلہ قابل ستائش

گرمائی تعطیلات میں خدمات انجام دینے کا فیصلہ قابل ستائش

NEW DELHI, MAY 10 (UNI):- Prime Minister Narendra Modi inaugurating Integrated Case Management Information System, in New Delhi on Wednesday.Chief Justice of India, Justice J S Khehar and Union Minister for Law and Justice and Information Technology Ravishankar Prasad also seen in the picture. UNI PHOTO-39u

غریبوں کو انصاف رسانی میں مدد ملے گی ، سپریم کورٹ میں ڈیجیٹل فائلنگ سسٹم کا افتتاح ، وزیراعظم اور چیف جسٹس کا خطاب

نئی دہلی۔ 10 مئی (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے گرمائی تعطیلات کے دوران بھی مقدمات کی سماعت کرنے عدلیہ کے فیصلہ کی ستائش کی اور کہا کہ اس سے عوام میں اپنے کام کے تعلق سے احساس ذمہ داری بڑھے گی۔ سپریم کورٹ میں انٹیگریٹیڈ کیس مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کا افتتاح کرتے ہوئے انہوں نے یہ بات کہی۔ اس سسٹم کے تحت مقدمات کا ڈیجیٹل اندراج کیا جاسکے گا۔ انہوں نے عوام پر زور دیا کہ وہ بدلتے وقت کے ساتھ ٹیکنالوجی سے خود کو ہم آہنگ کریں۔ چیف جسٹس آف انڈیا جے ایس کیہر نے ہائیکورٹ ججس سے خواہش کی کہ وہ گرمائی تعطیلات کے دوران چند دن رضاکارانہ طور پر خدمات انجام دیں تاکہ مقدمات کی عاجلانہ یکسوئی ہوسکے۔ سپریم کورٹ نے پہلے ہی اس ضمن میں فیصلہ کرلیا ہے۔ چیف جسٹس آف انڈیا نے 6 اپریل کو تمام 24 ہائیکورٹ کے چیف جسٹس کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے ان سے درخواست کی ہے کہ زیرتصفیہ مقدمات کی تعداد کم کرنے کیلئے گرمائی تعطیلات کے دوران چند دن خدمات انجام دیں۔ وزارت قانون کے تازہ اعداد و شمار کے مطابق سپریم کورٹ نے 61 ہزار سے زائد مقدمات تصفیہ طلب ہیں جبکہ 24 ہائیکورٹس نے زیرتصفیہ مقدمات کی تعداد 38.70 لاکھ ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے وکلاء سے خواہش کی ہے کہ وہ وزارت قانون کی شروع کردہ اسکیم کا ایک حصہ بنیں جہاں وکلاء غریب عوام کے مقدمات کی مفت پیروی کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کئی ماہرین  امراض نسواں نے ان (مودی) کی اپیل پر غریب حاملہ خواتین کی طبی جانچ کیلئے ہر ماہ کی 9 تاریخ کو مفت خدمات کی پیشکش کی۔ آئی ٹی سے وابستہ تقریباً 42 ہزار طلبہ حکومت سے تعلق رکھنے والے تقریباً 400 مسائل کا 36 گھنٹے مسلسل حل پیش کررہے ہیں۔ وزیراعظم نریندر مودی نے ڈیجیٹل فائلنگ کو متعارف کراتے ہوئے انٹیگریٹیڈ کیس انفارمیشن مینجمنٹ سسٹم اپ لوڈ کیا۔ اس سسٹم کے تحت فریقین مقدمات کے بارے میں آن لائن معلومات حاصل کرسکتے ہیں اور سپریم کورٹ میں کاغذ کے استعمال کو کم کرنے کی سمت بھی یہ ایک اہم قدم ہے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس کیہر نے کہا کہ وہ تمام 24 ہائیکورٹ اور ذیلی عدالتوں میں بھی اس سسٹم کی تجویز رکھتے ہیں۔ اس کے ذریعہ شفافیت پیدا ہوگی اور کسی طرح کے چھیڑ چھاڑ کا امکان نہیں رہے گا۔ اس کیساتھ ساتھ فریقین کو مقدمہ میں ہو رہی پیشرفت سے بھی واقفیت ہوگی۔ اگر کسی مرکزی یا ریاستی حکومت کے محکمہ کو فریق بنایا گیا ہو تو اسے تیاری میں مدد ملے گی۔ وزیراعظم نریندر مودی نے اپنی تقیر میں کہا کہ گرمائی تعطیلات کے دوران اپنا کام جاری رکھنے سپریم کورٹ اور ہائیکورٹ کے فیصلہ سے غریبوں کو انصاف میں مدد ملے گی۔ انہوں نے اس کے لئے اظہار تشکر بھی کیا۔ وزیراعظم عوام کی اس ذہنیت پر افسوس ظاہر کیا کہ وہ ٹیکنالوجی کو کوئی نیا آلہ تصور کرتے ہیں۔ کئی سرکاری دفاتر میں کمپیوٹرس نے گلدستہ کی جگہ لے لی لیکن ان کا استعمال صرف سجاوٹ تک ہی محدود ہوگیا ہے۔ کمپیوٹرس استعمال نہیں ہورہے ہیں اور یہ ان کی سوچ کا مسئلہ ہے۔

 

’’دیش بدل رہا ہے ‘‘،مودی کا ریمارک
نئی دہلی۔ 10 مئی (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے سپریم کورٹ کی تقریب میں خطاب کے دوران حکومت کے پسندیدہ سلوگن ’’دیش بدل رہا ہے‘‘ کا استعمال کیا اور کہا کہ ملک میں کام کرنے کا انداز اور ذہنیت تبدیل ہونے لگی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’دیش بدل رہا ہے۔ آج چھٹی (بدھا پورنیما) ہے پھر بھی ہم لوگ کام کررہے ہیں‘‘۔ مودی کے اس ریمارک پر شرکاء نے قہقہے لگائے۔ واضح رہے کہ نریندر مودی نے ان کی حکومت کے دو سال پورے ہونے پر ایک گیت جاری کیا تھا جس کے بول اس طرح ہیں: ’’میرا دیش بدل رہا ہے، آگے بڑھ رہا ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT