Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / گریٹر حیدرآباد کی ابتر صورتحال کا محکمہ بلدی نظم و نسق ذمہ دار

گریٹر حیدرآباد کی ابتر صورتحال کا محکمہ بلدی نظم و نسق ذمہ دار

عملی کام کم ، شہرت زیادہ ، ایم سرینواس کا ردعمل
حیدرآباد۔20اکٹوبر(سیاست نیوز) کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا( مارکسٹ) گریٹر حیدرآباد کمیٹی نے حکومت تلنگانہ اور محکمہ میونسپل ایڈمنسٹریشن کو گریٹر حیدرآباد کی ابتر صورتحال کا ذمہ دار ٹھرایا ہے۔ آج یہاں سی پی آئی ایم گریٹر حیدرآباد کمیٹی کے جنرل سکریٹری ایم سرینواس نے کہاکہ وزیر بلدی امور وزیر پریس کانفرنس اور پیپر پر شہری ترقی کے لئے رقومات کی اجرائی کو شہر کی ابتر صورتحال میںسدھار کا ذریعہ سمجھ رہے ہیں۔ مسٹر ایم سرینواس نے کہاکہ حالیہ دنوں میںہوئی موسلادھار بارش نے حکومت اور بلدی امور کے ذمہ دار محکموں کی کارکردگی کاپردہ فاش کردیا ہے۔ پچھلے تین سالو ں میںحکومت کو گریٹر حیدرآباد کے 2832کروڑ کے بجٹ کی اجرائی عمل میںلانی تھی مگر ایک پیسہ بھی جاری نہیں کیا گیا۔بلکہ دونوں شہر وں میں سڑکیں اور ڈرنیج نظام پوری طرح مفلوج ہوگیاہے۔ انہوں نے کہا کہ بلدی امور کے ذمہ دار وزیر کے ٹی راما رائو نے ایس آر ڈی پی کے تحت پچیس ہزارکروڑ کی جنگی خطوط پر اجرائی کا وعدہ کیاتھا تاکہ شہر کی سڑکو ںاور ڈرنیج نظام کو درست کیاجاسکے مگر تین سال میںایک روپئے کی بھی اجرائی عمل میں نہیں آئی۔انہوں نے کہاکہ بلدی گریٹر حیدرآباد کو اسٹامپ او رڈیوٹی کے ذریعہ تین سو کروڑ کی آمدنی تھی جس پر بھی روک لگادیاگیا۔ اور سڑکوں کی دیکھ بھال او رنگرانی کے لئے کارپوریشن قائم کرنے کی بات کو بھی فراموش کردیاگیا ہے اور اب کہاجارہا ہے کہ ٹاسک فورس کا قیام عمل میںلایاجائے گا۔ مسٹر سرینواس نے کہاکہ اگر حکومت گریٹر حیدرآباد کی ترقی کے لئے حقیقت میںسنجیدہ ہے تو کارپوریشن اور ٹاسک فورس کی ضرورت نہیںہے بلکہ حکومت کوچاہئے کہ وہ محکمہ کو درکار فنڈ او ررقومات کی حسب ضرورت اجرائی عمل میںلائے ۔ اس ضمن میںسی پی آئی ایم کی گریٹر حیدرآباد کمیٹی نے لوک ایویکتہ میںایک شکایت درج کرائی ہے اور 23اکٹوبر کو بلدیہ گریٹر حیدرآباد کے دفتر پر ایک احتجاجی دھرنا منظم کیاجائے گا تاکہ شہریوں کے مسائل کو حکومت تک پہنچایا جاسکے۔ مسٹر ایم سرینواس نے پارٹی کارکنوں کے علاوہ عام شہریوں سے بھی اس احتجاجی دھرنے میںشرکت کرنے کی اپیل کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT