Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / گستاخ رسولؐ کو کیفر کردار تک پہونچانے کا مطالبہ

گستاخ رسولؐ کو کیفر کردار تک پہونچانے کا مطالبہ

مجلس علماء دکن کا احتجاجی جلسہ، علمائے کرام کا خطاب
حیدرآباد 27 ڈسمبر (پریس نوٹ) صدر مجلس علماء دکن کے زیراہتمام احتجاجی جلسہ سے مولانا مفتی خلیل احمد صدر اجلاس نے کہاکہ شریعت کی روشنی میں گستاخ رسولؐ کی سزا قتل ہے۔ تاریخ شاہد ہے۔ اللہ تعالیٰ نے گستاخ رسول کی سزا اللہ تعالیٰ نے خود دی ہے اور فرمایا کہ یہ سزا گستاخ کو مل کے رہے گی۔ مولانا نے کہاکہ وقت آنے پر ہم نبیؐ کے نام پر سب کچھ قربان کردیں گے۔ نگران جلسہ مولانا سید محمد قبول بادشاہ قادری الشطاری نے کہاکہ ایمان کی کسوٹی محبت رسول ہے۔ وقفہ وقفہ سے اسلام، پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ و سلم اور دیگر عظیم شخصیتوں کی دل آزاری کا سلسلہ دشمنان اسلام کی طرف سے جاری ہے اس کے سدباب کے لئے یہ ہزاروں افراد کے مجمع میں ایک مذمتی قرارداد پیش کی جارہی ہے اگرچیکہ مسلمانوں کے اس گستاخی کی وجہ قلوب مجروح ہوئے ہیں ہم یہ بتادینا چاہتے ہیں کہ ہم سب کچھ برداشت کرسکتے ہیں لیکن نبی ﷺ کی شان میں گستاخی برداشت نہیں کرسکتے۔ ہم اپنا تن من دھن رسولؐ پر قربان کرنے تیار ہیں۔ اس جلسہ عام کو مشائخ کرام نے بھی مخاطب کیا۔ مولانا شطاری نے کثیر اجتماع میں عامۃ المسلمین سے مذمتی قرارداد پیش کرتے ہوئے منظوری حاصل کی۔ عوام نے نعرہ تکبیر اور نعرہ رسالتؐ کی گونج میں منظوری دی۔ مولانا شطاری نے یہ بھی وضاحت کی کہ اس سلسلہ میں صدر مجلس علماء دکن گورنر تلنگانہ اور ضرورت پڑنے پر صدرجمہوریہ ہند اور چیف منسٹر ریاستی تلنگانہ سے بھی ملاقات کرکے یادداشت کے علاوہ مذمتی قرارداد پیش کرے گی۔ مولانا سید اولیاء حسینی مرتضیٰ بادشاہ قادری نے اپنے تفصیلی خطاب میں تاریخ اسلام پر مختلف واقعات کے ذریعہ روشنی ڈالی اور اپنے ولولہ انگیز خطاب میں مسلمانوں کو جھنجوڑا اور گستاخ رسول کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا اور دیگر مشائخ نے بھی مخاطب کیا۔ اس موقع پر علماء و مشائخ میں حضرت مولانا سید غیاث الدین معینی (اجمیر شریف) مہمان اجلاس کے علاوہ حضرت مولانا سید علی اکبر نظام الدین حسینی، مولانا سید محمود صفی اللہ حسینی وقار پاشاہ قادری، مولانا محمد خواجہ شریف شیخ الحدیث جامعہ نظامیہ، مولانا سید محمود بادشاہ قادری، مولانا سید احمد پاشاہ قادری، مولانا سید علی بادشاہ قادری (قادری چمن)، مولانا سید خلیل اللہ حسینی بندہ نوازی، مولانا سید حامد محمد قادری، مولانا سید ولی اللہ حسینی ثانی، مولانا اکرم بادشاہ تخت نشین، مولانا سید احمد سعید قادری، مولانا سید ابراہیم قادری زرین کلاہ، مولانا سید نورالحسن شطاری، مولانا سید ارشد محمود رضوی، مولانا سید غلام غوث شیخن احمد کامل بادشاہ شطاری، مولانا سید قادر محی الدین جنید بادشاہ موجود تھے۔ مولانا سید صدیق حسینی نے آخر میں دعا کی۔

TOPPOPULARRECENT