گلبرگہ کے نام کی تبدیلی کی مخالفت

گلبرگہ19 اکتوبر(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) شکیل احمد سینئر لیڈر نے گلبرگہ کا نام تبدیل کر کے اُسے کلبرگی قرار دینے کے ریاستی حکومت کے اقدام کی پرزور مخالفت کی ہے اُنہوں نے اپنے ایک بیان میںکہا ہے کہ گلبرگہ ایک تاریخی نام ہے گلبرگہ سے قبل بہمنی دور حکومت میں گلبرگہ کا نام حسن آباد تھا حضرت خواجہ بندہ نوازگیسودازؒ کی آمد کے بعد اس شہر کا نام گلبرگہ مشہور ہوا ۔ گل برگہ یعنی پھول اور پتیوں والا شہر، یقینا حضرت خواجہ بندہ نوازؒ کے فیض عام سے یہ شہر سرسبز و شاداب ہوگیا اور پھولا پھلا۔ ریاست کی کانگریس حکومت نے گلبرگہ کو کلبرگی قرار دیکر آج کے ترقی یافتہ گلبرگہ شہر کو ایک چھوٹے سے گمنام علاقہ میں تبدیل کر دیا ہے جہاں پتھروں کے سوا کچھ نہیں تھا، بلکہ گلبرگہ کو کلبرگی قرار دیکر پتھروں کے دور میں پہنچا دیا۔ شکیل احمد نے ریاست کی کانگریس حکومت پر فرقہ پرستوں کے آگے گٹھنے ٹیکنے اور فرقہ پرستوں کے ایجنڈہ پر عمل کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مہاراشٹر اسمبلی انتخابات میں کانگریس کی جو درگت بنی ہے اُس سے کرناٹک کی کانگریس حکومت کو سبق سیکھنا چاہئے اور گلبرگہ کا نام تبدیل کرنے کا فیصلہ فوری واپس لینا چاہئے ورنہ آنے والے انتخابات میں کانگریس کو کرناٹک کے اقتدار سے بھی ہاتھ دھونا پڑیگا۔

TOPPOPULARRECENT