Friday , November 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / گمبھی راؤ کے اقلیتوں سے ناانصافی

گمبھی راؤ کے اقلیتوں سے ناانصافی

گمبھی راؤ پیٹ /8 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) گمبھی راؤ پیٹ کے کانگریس قائدین جن میں ایم پی ٹی سی رکن محمد حمیدالدین خالد کے علاوہ سید نصرت اللہ حسینی ، محمد قطب الدین ، سید ہاشمی ، محمد محمود وغیرہ نے ریاستی وزیر پنچایت راج انفارمیشن ٹکنالوجی تارک راما راؤ کے حلقہ اسمبلی سرسلہ میں شامل گمبھی راؤ پیٹ کے اقلیتوں سے ناانصافی حکومت ونیز تارک راما راؤ پر الزام عائد کیا ۔ آج وہ یہاں اردو اخبارات کے نمائندوں سے بات کر رہے تھے ۔ ان قائدین نے کہا کہ تلنگاہن حکومت کے چیفمنسٹر چندر شیکھر راؤ اور اس علاقہ سے نمائندگی کرنے والے ریاستی وزیر تارک راما راؤ علاقہ کے مسلمانوں کے مسائل کییکسوئی میں اکثر ناکام ہوگئے ۔ کانگریس قائدین نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت برسر اقتدار آنے پر مسلمانوں کو صرف چار ماہ کے اندر 12 فیصد تحفظات کے علاوہ انیک وعدے کئے تھے ۔ لکن اس پر کسی بھی قسم کی کوئی عمل آوری نہیں ہوئی ۔ کانگریس قائدین و ایم پی ٹی سی رکن حمیدالدین خالد نے کہا کہ گذشتہ سال کے دوران علاقہ کے اقلیتوں کو روزگار سے مربوت کرنے کیلئے اقلیتی مائناریٹی فینانس کارپوریشن کے تحت قرضوں کی منظوری کا اعلان کیا تھا ۔ لیکن اب تک اس پر کسی بھی قسم کی ٹھوس کارروائی نہیں ہوئی ۔ سال اختتام کو پہونچا ۔ گذشتہ دنوں کارپوریشن کی جانب سے گمبھی راؤ پیٹ کے بے روزگار اقلیتوں کو لون کی ادائی کیلئے صرف چار یونٹ منظور کئے گئے جبکہ یہاں اقلیتوں کی کافی تعداد ہیں ۔ اس طرح صرف4 یونٹوں کی منظوری علاقہ کے مسلمانوں کے ساتھ ناانصافی ہے ۔ کانگریس قائدین نے کے ٹی آر سے مطالبہ کیا کہ وہ میناریٹی کارپوریشن کی جانب سے دئے جانے والے لون کیلئے یونٹوں کی تعداد میں اضافہ کرنے دونوں قائدین نے احتجاجی منظاہرہ کرنے کی بات کہی ۔

TOPPOPULARRECENT