Thursday , January 18 2018
Home / Top Stories / گمشدہ طیارہ کے بعض حصوں کی بحر ہند میں نشاندہی

گمشدہ طیارہ کے بعض حصوں کی بحر ہند میں نشاندہی

کینبرا ؍ کوالالمپور ، 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیائی وزیر اعظم ٹونی ایبٹ کا کہنا ہے کہ سٹیلائٹ سے حاصل ہونے والی تصاویر سے ایسے ملبے کی نشاندہی ہوئی ہے جو کہ ممکنہ طور پر ملائیشین ایرلائن کے لاپتہ طیارہ کا ہو سکتا ہے۔ ملائیشیائی ایرلائن کے گمشدہ طیارے کے سراغ میں اہم پیش رفت دیکھی گئی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ آسٹریلیا کو بحرہند

کینبرا ؍ کوالالمپور ، 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیائی وزیر اعظم ٹونی ایبٹ کا کہنا ہے کہ سٹیلائٹ سے حاصل ہونے والی تصاویر سے ایسے ملبے کی نشاندہی ہوئی ہے جو کہ ممکنہ طور پر ملائیشین ایرلائن کے لاپتہ طیارہ کا ہو سکتا ہے۔ ملائیشیائی ایرلائن کے گمشدہ طیارے کے سراغ میں اہم پیش رفت دیکھی گئی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ آسٹریلیا کو بحرہند کے جنوبی حصے میں دو ایسے ٹکڑے ملے ہیں جو کہ لاپتہ طیارے کا ملبہ ہو سکتے ہیں۔ یہ بات ایبٹ نے آج پارلیمنٹ کو بتائی۔ ان کا کہنا تھا کہ طیارے کے لاپتہ ہو جانے کے دو ہفتوں بعد ’’نئی اور مستند‘‘ اطلاعات سامنے آئی ہیں۔ انھوں نے مزید کہا ’’آسٹریلین میریٹائم سیفٹی اتھارٹی کو سٹیلائٹ کے ذریعے ایسے مواد کی اطلاع ملی ہے جس کا تعلق ملائیشیائی طیارہ سے ہو سکتا ہے‘‘۔ 8 مارچ کو لاپتہ ہو جانے والے اس طیارے پر 239 افراد سوار تھے۔ ملائیشیائی ایئر لائن کی پرواز کی تلاش میں آسٹریلیا سمیت 26 ممالک حصہ لے رہے ہیں اور اس سلسلے میں بحری اور فضائی جہازوں کی مدد حاصل کی جا رہی ہے۔ سراغ لگانے کیلئے حکام اپنا دائرہ بڑھاتے جا رہے ہیں اور اس وقت براعظم آسٹریلیا کے رقبے کے برابر حصے پر اس طیارے کی تلاش جاری ہے۔

ملائیشیا کے ٹرانسپورٹ کے وزیر حشام الدین حسین نے منگل کو بتایا تھا کہ طیارہ کو بحیرہ کیسپیئن سے لے کر بحر ہند کے جنوب تک ڈھونڈا جارہا ہے اور یہ کہ یہ رقبہ 7.86 ملین مربع میٹر بنتا ہے۔ آسٹریلیائی وزیر اعظم نے تاہم خبردار کیا ہے کہ ان اطلاعات کی بنیاد پر فوری طور پر کوئی نتیجہ اخذ نہیں کیا جانا چاہئے۔ ’’ہمیں یہ ذہن میں رکھنا چاہئے کہ اس ملبے تک پہنچنا خاصا مشکل کام ہے۔ یہ بھی ممکن ہے کہ یہ ملبہ گمشدہ طیارے کا نہ ہو۔‘‘ دوسری جانب ملائیشیائی حکام نے امریکی ادارے ایف بی آئی سمیت دیگر تفتیشی ماہرین سے پائلٹ اور ان کے نائب کے گھروں سے برآمد ہونے والے فلائٹ سِمولیٹر، لیپ ٹاپ اور موبائل فونز کی جانچ پڑتال میں تعاون کرنے کی درخواست کی ہے۔

امریکہ ہرممکنہ مدد کیلئے تیار : اوباما
اس دوران امریکی صدر براک اوباما نے کہا کہ امریکہ لاپتہ ملائیشیائی طیارہ کو ڈھونڈنے کیلئے دستیاب ہر ممکنہ وسیلہ کو فراہم کیا ہے جس میں ایف بی آئی شامل ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس طیارہ کی کھوج امریکی حکومت کی اہم ترین ترجیحات میں شامل ہے ۔ انھوں نے ڈلاس کے مقامی نیوز چینل کو انٹرویو میں کہا کہ امریکہ گمشدہ جٹ لائینر کا پتہ لگانے میں سنجیدہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT