Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / گن فاونڈری کی تاریخی شناخت تبدیل ہوگی ؟

گن فاونڈری کی تاریخی شناخت تبدیل ہوگی ؟

اسٹیٹ بنک آف حیدرآباد کا ہیڈکوارٹر گچی باولی منتقل کرنے کا منصوبہ
حیدرآباد ۔ 8 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : گن فاونڈری کی تاریخی شناخت ہے یہاں اسٹیٹ بنک آف حیدرآباد کی عمارت کو اس علاقہ کی ایک تاریخی علامت متصور کیا جاتا ہے ۔ لیکن اب اس تاریخی اسٹیٹ بنک آف حیدرآباد کے ہیڈکوارٹرس کو گن فاونڈری سے منتقل کیا جانے کا منصوبہ ہے ۔ بنک کے دفتر کو سائبر آباد منتقل کیا جائے گا ۔ آئندہ 18 ماہ کے اندر 100 کروڑ کی لاگت سے تعمیر کردہ عمارت میں یہ ہیڈکوارٹر منتقل کیا جائے گا ۔ تاہم گن فاونڈری کی بنک کی بلڈنگ میں برانچ آفس کام کرتا رہے گا ۔ منیجنگ ڈائرکٹر ایس بی ایچ شنتانو مکرجی نے کہا کہ گن فاونڈری کی اس تاریخی عمارت کو برانچ کے طور پر استعمال کیا جائے گا ۔ اسٹیٹ بنک آف حیدرآباد کا 8 اگست 1941 میں قیام عمل میں آیا تھا ۔ اس بنک کا منفرد انداز میں آغاز ہوا اور مابقی ریاست حیدرآباد کے سنٹرل بنک کا موقف رکھتے ہوئے اس کے تحت حیدرآباد ، تلنگانہ ، کرناٹک ، مہاراشٹرا کے علاقے تھے ۔ ان علاقوں میں سابق ریاست حیدرآباد کی کرنسی چلتی تھی ۔ عثمانیہ سکہ کا چلن اسی بنک سے جاری تھا ۔ اس بنک کو کمرشیل بنکنگ کا درجہ دیتے ہوئے گن فاونڈری میں پہلی برانچ 5 اپریل 1942 کو قائم کی گئی ۔ یہ بنک نظام کے دور حکومت میں حیدرآباد سے وابستہ تھا ۔ جس کو بعد میں حکومت ہند میں ضم کیا گیا تھا ۔ گن فاونڈری کی عمارت کو ان ٹیک ایوارڈ بھی مل چکا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT