Friday , January 19 2018
Home / ہندوستان / گوا میں رام سینا پر امتناع میں توسیع

گوا میں رام سینا پر امتناع میں توسیع

ھندوتوا تنظیم کوسرگرمیاں بحال کرنے سے روک دیا گیا

ھندوتوا تنظیم کوسرگرمیاں بحال کرنے سے روک دیا گیا
پناجی۔12جنوری(سیاست ڈاٹ کام ) گوا میں اپنی سرگرمیاں جاری رکھنے سری رام سینا کے اعلان کے صرف چند گھنٹوں بعد ہی ریاستی چیف منسٹر لکشمی کانت پارسیکر نے کہا کہ دائیں بازو کی متنازعہ تنظیم پر عائد امتناع میں مزید چھ ماہ کی توسیع کی جائے گی ۔ پارسیکر نے چیف انفارمیشن کمشنر کے نئے دفتر کا افتتاح کرنے کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ’’ سری رام سینا پر عائد امتناع میں مزید چھ ماہ کی توسیع کی جائے گی ۔ میں اس بات سے باخبر نہیں تھا کہ یہ ( امتناع) ڈسمبر میں ختم ہوچکا تھا ۔ چند اطلاعات میں کہا گیا تھا کہ ہم اس امتناع پر توسیع کرنے میں ناکام ہوگئے ہیں ‘‘ ۔ یہ چھوٹی اور غیر معروف تنظیم اُس وقت میڈیا کی شہ سرخیوں میں اپنی جگہ بنائی تھی جب اُس کے ارکان نے 2009ء میں منگلور کے ایک پب میں موج مستی کرنے والے لڑکے اور لڑکیوں پر حملہ کیا تھا ۔ سری رام سینا نے اپنے ھندو توا ایجنڈہ کی توثیق کرتے ہوئے کہا کہ وہ پب کلچر کی مخالفت جاری رکھے گی ۔ رام سینا کے سربراہ پرمود متھالک نے کل شام پی ٹی آئی سے کہا کہ ان کی تنظیم گوا میں اپنی سرگرمیوں کے آغاز پر غور کیلئے 26جنوری کو بلگام میں اپنا اجلاس منعقد کرے گی ۔ اس تنظیم نے کرناٹک میں ریاستی سطح کا اجلاس منعقد کرنے کا اعلان بھی کردیا تھا تاکہ گوا میں ایک تنظیمی سرگرمیوں کے دوبارہ آغاز کے منصوبے تیار کئے جائیں ۔ رام سینا پر 20اگست 2014ء کو چھ ماہ کیلئے امتناع عائد کیا گیات ھا ہے جو ڈسمبر میں ختم ہوگیا ۔ کرناٹک اور گوا میں پولیس نے اس تنظیم کے خلاف رپورٹ دی تھی اور اندیشہ ظاہر کیا تھا کہ اگر اس تنظیم ( رام سینا) کو اپنی سرگرمیاں جاری رکھنے کی اجازت دی جائے تو اس سے امن و قانون کے مسائل پیدا ہونے کا اندیشہ رہے گا ۔

TOPPOPULARRECENT