Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / گوا کابینہ میں شامل رہتے ہوئے حکومت پر تنقید بے معنی: سینا

گوا کابینہ میں شامل رہتے ہوئے حکومت پر تنقید بے معنی: سینا

پاناجی۔/24اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایم جی پی جو گوا میں بی جے پی زیر قیادت مخلوط حکومت کا حصہ ہے، اس نے ریاستی حکومت کے کام کاج پر ناراضگی ظاہر کی ہے جس کے ایک روز بعد آج شیوسینا نے اسے ’’ مضحکہ خیز ‘‘ قراردیا اور کہا کہ ناقد پارٹی کو سب سے پہلے منوہر پاریکر زیر قیادت کابینہ سے اپنے وزراء کو دستبردار کرانا چاہیئے۔ مہاراشٹر وادی گومنتک پارٹی ( ایم جی پی) کے ریاستی کابینہ میں 2 وزراء ہیں، جس کی تشکیل مارچ میں ریاستی اسمبلی چناؤ کے معلق انتخابی فیصلہ کے بعد ہوئی تھی۔ صدر ایم جی پی دیپک دھاولیکر نے گزشتہ روز میڈیا سے بات چیت میں کہا تھا کہ پارٹی کی سنٹرل کمیٹی کے بعض ارکان پاریکر حکومت کی کارگزاری سے ناخوش ہیں کیونکہ ان کا احساس ہے کہ نظم و نسق بکھر چکا ہے۔ شیوسینا کی ترجمان راکھی نائیک نے آج کہا کہ پاریکر حکومت کے خلاف ایم جی پی کی تنقید مذاق کے سوا کچھ نہیں کیونکہ اس پارٹی کو اکثر ایسی چالیں چلنے کی عادت ہوگئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT