Wednesday , January 17 2018
Home / سیاسیات / گورنرس کو استعفے کے لئے مجبور کرنا توہین آمیز رویہ

گورنرس کو استعفے کے لئے مجبور کرنا توہین آمیز رویہ

نئی دہلی ۔14ستمبر (سیاست ڈاٹ کام )این ڈی اے حکومت پر یو پی اے حکومت کے تقرر کردہ گورنروں کو استعفے کیلئے مجبور کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے سابق گورنر کیرالا اور دہلی کے تین مرتبہ چیف منسٹر رہنے والی شیلا ڈکشٹ نے آج کہاکہ نئی حکومت دستوری عہدوں کو نشانہ بنارہی ہے ۔ اس کی یہ کارروائی مطلب براری پر مبنی اور سیاسی انتقام کا حصہ ہے ۔ این ڈ

نئی دہلی ۔14ستمبر (سیاست ڈاٹ کام )این ڈی اے حکومت پر یو پی اے حکومت کے تقرر کردہ گورنروں کو استعفے کیلئے مجبور کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے سابق گورنر کیرالا اور دہلی کے تین مرتبہ چیف منسٹر رہنے والی شیلا ڈکشٹ نے آج کہاکہ نئی حکومت دستوری عہدوں کو نشانہ بنارہی ہے ۔ اس کی یہ کارروائی مطلب براری پر مبنی اور سیاسی انتقام کا حصہ ہے ۔ این ڈی اے حکومت گورنروں کے ساتھ توہین آمیز رویہ اختیار کررہی ہے جو جمہوریت کے اصولوں کے مغائر ہے۔ 76سالہ شیلا ڈکشٹ نے گذشتہ مارچ میں یو پی اے حکومت کی جانب سے کیرالا کا گورنر مقرر کیا گیا تھا ۔ لوک سبھا انتخابات سے عین قبل ضابطہ اخلاق کے نفاذ سے پہلے گورنر مقرر کئے جانے کے بعد شیلا ڈکشٹ کو مرکزی حکومت نے استعفیٰ کیلئے مجبور کردیا ۔ مودی حکومت کے ایک سینئر عہدیدار نے انہیں فون پر ہدایت دی کہ وہ اپنا استعفیٰ پیش کردیں ۔ شیلا ڈکشٹ نے اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گورنروں کے ساتھ عزت سے پیش آنا چاہیئے ۔ یہ نہایت ہی باوقار اور دستوری عہدہ ہے ۔ وہ لوگ گورنروں کو چُن چُن کر نشانہ بنارہے ہیں ۔ ان کی یہ کارروائی توہین آمیز ہے جو جمہوریت کیلئے ٹھیک نہیں ہے۔

شیلاڈکشٹ نے کہا کہ اگر گورنرس اُس وقت استعفیٰ دے دیں جب مرکز میں نئی حکومت آئے تو اس کیلئے ایک نیا قانون لانا ہوگا ۔ میں اپنے بارے میں نہیں سوچ رہی ہوں مجھے ہمیشہ دستوری عہدوں کے وقار کی فکر رہتی ہے ۔ اگر گورنرس کو نئی حکومت آنے کے بعد استعفیٰ ہی دینا ہے کہ مرکز کو چاہیئے کہ وہ اس سلسلہ میں قانون بنائے ۔ پارلیمنٹ میں قانون کی باقاعدہ منظوری کے بعد مرکز میں نئی حکومت کے اقتدار حاصل کرتے ہی گورنرس کے استعفیٰ کی راہ ہموار کی جائے ۔ این ڈی اے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے شیلا ڈکشٹ نے کہا کہ گجرات میں گورنر کے عہدہ سے کملا بینی وال کا میزورم تبادلہ کردیا گیا اس کے بعد انہیں این ڈی اے حکومت نے اس پُروقار عہدے سے برطرف کردیا ۔ گجرات سے شمال مشرقی ریاست کو تبادلہ کرنے کا فیصلہ کملا بینی والکیلئے سزا تھا ۔ 87سالہ کملابنیول گجرات کے سابق گورنر ہیں جنہوں نے نریندر مودی کے خلاف محاذآرائی شروع کی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT