Friday , April 20 2018
Home / شہر کی خبریں / گورنر نرسمہن پرکانگریس قائدین کی تنقید مسترد

گورنر نرسمہن پرکانگریس قائدین کی تنقید مسترد

ریاست کی ترقی سے کانگریس بوکھلاہٹ کا شکار،وزیر آبپاشی ہریش راؤ کا بیان

حیدرآباد۔22 ۔ جنوری (سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے کانگریس قائدین کی جانب سے گورنر ای ایس ایل نرسمہن پر کی گئی تنقیدوں کی مذمت کی اور کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کے ترقیاتی کاموں کو برداشت نہ کرتے ہوئے کانگریس قائدین گورنر پر بے بنیاد الزامات عائد کر رہے ہیں۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ کانگریس قائدین کو خوف لاحق ہوچکا ہے کہ وہ 2019 ء میں دوبارہ شکست سے دوچار ہوں گے۔ حکومت کے ترقیاتی کام کانگریس کے صفایا کا موجب بن سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گورنر ای ایس ایل نرسمہن نے کالیشورم پراجکٹس کا دورہ کرتے ہوئے دستوری فرائض کی کوئی خلاف ورزی نہیں کی۔ ریاست کے گورنر کی حیثیت سے انہیں ترقیاتی کاموں کا جائزہ لینے کا حق حاصل ہے۔ گورنر نے پراجکٹ کے کاموں کا شخصی طور پر جائزہ لیا اور حکومت کی ستائش کی۔ انہوں نے راج بھون میں بیٹھ کر بیان نہیں دیا بلکہ پراجکٹ کا مشاہدہ کرنے کے بعد اپنی رائے کا اظہار کیا ہے۔ گورنر کو ریاست کی ترقی اور آبپاشی پراجکٹ کی عاجلانہ تکمیل سے خصوصی دلچسپی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی وزیر نتن گڈکری نے بھی کالیشورم پراجکٹ کی تعمیر پر تلنگانہ حکومت کی ستائش کی ہے ۔ ہریش راؤ نے کہا کہ گورنر کو نشانہ بنانا اور ان پر بے بنیاد الزامات عائد کرنا کسی بھی پارٹی کو زیب نہیں دیتا۔ کانگریس قائدین کے بیانات ان کی تہذیب اور اخلاق کو ظاہر کرتے ہیں۔ اپوزیشن دراصل حکومت کے ترقیاتی کاموں سے بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن ترقی کی راہ میں رکاوٹ پیدا کرنا چاہتی ہے جبکہ عوام حکومت کی کارکردگی سے خوش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کئی ترقیاتی کاموں کی کانگریس کے دیگر قائدین ستائش کر رہے ہیں۔ اس سلسلہ میں انہوں نے اپوزیشن لیڈر جانا ریڈی کی جانب سے جی ایچ ایم سی حدود میں پانچ روپئے کھانے کی اسکیم کی ستائش کا ذکر کیا ۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک سے تعلق رکھنے والے کانگریس کے وزراء نے تلنگانہ میں بھیڑ بکریوں کی تقسیم کی ستائش کی اور اس اسکیم کو کرناٹک میں متعارف کرنے کا اعلان کیا ۔

TOPPOPULARRECENT