Sunday , April 22 2018
Home / شہر کی خبریں / گورنر نرسمہن کو ٹی آر ایس میں شمولیت کا مشورہ ۔ ٹی جیون ریڈی

گورنر نرسمہن کو ٹی آر ایس میں شمولیت کا مشورہ ۔ ٹی جیون ریڈی

حیدرآباد۔ 21 جنوری (سیاست نیوز) تلنگانہ اسمبلی میں کانگریس ڈپٹی لیڈر ٹی جیون ریڈی نے گورنر ای ایس ایل نرسمہن کو مشورہ دیا کہ اگر انہیں واقعی سیاسی زندگی سے دلچسپی ہو تو ٹی آر ایس میں شامل ہوجائیں۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے جیون ریڈی نے گورنر نرسمہن کی جانب سے کئے گئے بعض ریمارکس کے تعلق سے کہا کہ گورنر عہدہ پر فائز رہتے ہوئے اس طرح کے ریمارکس کرنا نامناسب ہے ۔ جیون ریڈی نے کہا کہ محض چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کو خطاب سے نوازنے گورنر نے کالیشورم پراجیکٹ کا دورہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس دور حکومت میں ہی پرانہیتا چیوڑلہ پراجیکٹ کیلئے ابتدائی کام آغاز کئے گئے جبکہ گورنر کو چاہئے تھا کہ وہ پراجیکٹ کی مکمل تاریخ سے واقف ہوکر بات کرتے ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں ٹی آر ایس حکومت سابق کانگریس حکومت میں مختلف پراجیکٹس کیلئے شروع کئے گئے کاموں کو فراموش کرکے اب ان پراجیکٹس کے ناموں کو تبدیل کرکے ان کی تکمیل کا سہرا اپنے سر باندھنے کی کوشش کر رہی ہے ۔ اسی لئے چیف منسٹر کی ایما پر گورنر نے کالیشورم پراجیکٹ کا دورہ کرکے ان پراجیکٹس کے کاموں کی ستائش کرتے ہوئے نرسمہن، چیف منسٹر کو خطابات سے نواز رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت، مرکز سیملنے والے مختلف فلاحی و بہبودی اسکیمات کی رقومات کو دیگر مقاصد کیلئے خرچ کررہے ہیں اور ان میں بے قاعدگیاں بھی پیش آرہی ہیں۔ لہذا انہوں نے گورنر سے حکومت میں پیش آنے والی مبینہ بعض بے قاعدگیوں کے واقعات کی مکمل تحقیقات کروانے کیلئے اقدامات کی خواہش کی۔

 

گورنر کی جانب سے چیف منسٹر کی ستائش کی مذمت
بھجن محکمہ الاٹ کرنے حکومت سے خواہش ۔ سابق ایم پی پونم پربھاکر
حیدرآباد۔ 21 جنوری (سیاست نیوز) سینئر کانگریس قائد و سابق ایم پی پونم پربھاکر نے گورنر ای ایس ایل نرسمہن کی بیان بازیوں اور ریمارکس پر برہمی کا اظہار کیا۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت کے مختلف فلاح و بہبودی پروگراموں اور اسکیموں کی ستائش کرنے اور ان کو پسند کرنے پر کوئی پرواہ کی بات نہیں ہوگی، لیکن چیف منسٹر تلنگانہ کو کالیشورم چندر شیکھر راؤ جیسے القاب سے نوازنا ٹھیک نہیں۔ پونم پربھاکر نے آج کریم نگر میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے تلنگانہ حکومت سے خواہش کی کہ کوئی گنجائش اگر ہو تو نرسمہن کو ’بھجن کا محکمہ‘ مختص کریں۔ انہوں نے طنزیہ انداز میں کہا کہ تلنگانہ عوام گورنر کو ’کلوا کنٹلہ نرسمہن‘ تصور کررہے ہیں۔ پونم پربھاکر نے گورنر کی سرگرمیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ دیگر اپوزیشن پارٹیوں سے انحراف کرکے برسراقتدار ٹی آر ایس میں شامل ہونے والے ارکان اسمبلی کو غیرجمہوری انداز میں گورنر نے کابینہ میں شامل کرنے پر ان کو حلف دلایا تھا۔ گورنر کے اس اقدام سے ’راج بھون‘ کا وقار و اہمیت ختم ہوگئی۔ انہوں نے کہا کہ گورنر تلنگانہ حکومت بالخصوص چیف منسٹر کی ستائش کرکے چیف منسٹر کی تائید حاصل کرکے گورنر کے عہدہ پر برقرار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آندھرا پردیش میں بھی گورنر کی مخالفت کرکے تلگودیشم کی حلیف بی جے پی کے صدر رکن پارلیمان ہری بابو نے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کو مکتوب تحریر کیا اور نرسمہن کی مخالفت کی۔ آندھرا پردیش کیلئے فی الفور نئے گورنر کا تقرر کا مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT