Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / گورنر کو خصوصی اختیارات کی ٹی آر ایس پر ذمہ دار ی

گورنر کو خصوصی اختیارات کی ٹی آر ایس پر ذمہ دار ی

حیدرآباد کی ساری آمدنی تلنگانہ پر ہی خرچ ہوگی ۔ مرکزی وزیر جئے رام رمیش کا اعلان

حیدرآباد کی ساری آمدنی تلنگانہ پر ہی خرچ ہوگی ۔ مرکزی وزیر جئے رام رمیش کا اعلان

حیدرآباد /22 اپریل (سیاست نیوز) مرکزی وزیر جے رام رمیش نے کہا کہ گورنر کو جو خصوصی اختیارات دیئے گئے ہیں، اس کے لئے ٹی آر ایس ذمہ دار ہے۔ تلنگانہ میں انتخابی مہم کے دوران انھوں نے کہا کہ حیدرآباد کا سارا (ریونیو) آمدنی صرف تلنگانہ پر خرچ ہوگی۔ جہاں تک گورنر کو نظم و ضبط کے اختیارات دینے کا سوال ہے، تو اس کے لئے ٹی آر ایس اور اس کے سربراہ کے چندر شیکھر راؤ ذمہ دار ہیں، کیونکہ جب مرکزی حکومت تلنگانہ ریاست تشکیل دینے والی تھی تو سربراہ ٹی آر ایس نے حیدرآباد میں رہنے والے سیما۔ آندھرا عوام اور ملازمین کے خلاف اشتعال انگیزی شروع کردی تھی، جس سے سیما۔ آندھرا کے عوام اور سرکاری ملازمین میں عدم تحفظ کا احساس پیدا ہوا۔ سیما۔ آندھرا کے قائدین تقسیم ریاست کے خلاف تھے اور حیدرآباد کو مرکز کا زیر انتظام علاقہ قرار دینے پر زور دے رہے تھے، تاہم سیما۔ آندھرا عوام کی جان و مال کے تحفظ کا انھیں یقین دلانے کے لئے گورنر کو ذمہ داری سونپی گئی۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس صدر سونیا گاندھی نے 2009ء میں علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کا وعدہ کیا تھا، 4 سال تک یو پی اے اور آندھرا پردیش میں اتفاق رائے پیدا کرنے کے بعد کانگریس نے علحدہ ریاست کی تشکیل کا وعدہ پورا کیا۔ صرف سونیا گاندھی نے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دی ہے، جب کہ ٹی آر ایس بے بھروسہ جماعت ہے، جو جھوٹ کا سہارا لے کر تلنگانہ عوام کو گمراہ کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے دو ارکان پارلیمنٹ تھے، جو کبھی ایک دوسرے سے بات چیت نہیں کرتے تھے، جب کہ کے چندر شیکھر راؤ کبھی پارلیمنٹ نہیں آتے تھے، اس طرح انھوں نے تلنگانہ بل کی منظوری سے متعلق بحث میں کوئی حصہ نہیں لیا۔ علاوہ ازیں راجیہ سبھا میں ٹی آر ایس کی کوئی نمائندگی نہیں ہے۔ انھوں نے تلنگانہ عوام سے اپیل کی کہ وہ ٹی آر ایس پر بھروسہ نہ کریں اور تلنگانہ ریاست کی ترقی کے لئے کانگریس کا ساتھ دیں۔ کانگریس کے رکن راجیہ سبھا پی گووردھن ریڈی کی جانب سے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی پنالہ لکشمیا پر ٹکٹ فروخت کرنے کے الزام پر پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ الزام بے بنیاد ہے، پی گووردھن ریڈی سینئر قائد ہیں، تاہم اس الزام کا پارٹی سخت نوٹ لے گی۔

TOPPOPULARRECENT