Wednesday , December 12 2018

گورنر کو زائد اختیارات کے خلاف مہم میں شدت

مسئلہ کو پارلیمنٹ میں اٹھانے ٹی آر ایس ارکان کا فیصلہ ، راجناتھ سنگھ سے کل ملاقات

مسئلہ کو پارلیمنٹ میں اٹھانے ٹی آر ایس ارکان کا فیصلہ ، راجناتھ سنگھ سے کل ملاقات
حیدرآباد۔/19اگسٹ، ( سیاست نیوز) تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے درمیان دس برسوں تک حیدرآباد مشترکہ دارالحکومت کے پس منظر میں گورنر کو لاء اینڈ آرڈر کے سلسلہ میں زائد اختیارات کی تجویز کے خلاف ٹی آر ایس نے اپنی جدوجہد تیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سلسلہ میں ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ 21اگسٹ کو مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ سے ملاقات کریں گے۔ پارٹی ذرائع نے بتایا کہ راجناتھ سنگھ نے ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ کو 21اگسٹ کو 12بجے دن ملاقات کا وقت دیا ہے۔ ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ نے اس مسئلہ پر پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں سخت احتجاج کیا تھا جس کے بعد مرکزی وزیر داخلہ نے ان سے شخصی طور پر ملاقات کا تیقن دیا۔ بتایا جاتا ہے کہ اس ملاقات کے دوران ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ گورنر کو زائد اختیارات کی مخالفت کرتے ہوئے ایک تفصیلی یادداشت پیش کریں گے۔ پارٹی کا یہ استدلال ہے کہ آندھرا پردیش تنظیم جدید بل 2014ء میں گورنر کو زائد اختیارات کی کوئی گنجائش نہیں ہے لیکن مرکزی حکومت آندھرا پردیش حکومت کے دباؤ میں لاء اینڈ آرڈر کے مسئلہ پر گورنر کو زائد اختیارات دینے کی تجویز رکھتی ہے اور یہ تجویز دستور کے مغائر ہے۔ پارٹی کا یہ بھی کہنا ہے کہ لاء اینڈ آرڈر کا مسئلہ کسی بھی ریاست کی حکومت کے تحت ہوتا ہے لیکن مشترکہ دارالحکومت کے نام پر گورنر کو اختیارات تفویض کرنا عوامی منتخب حکومت کے اختیارات کو سلب کرنا ہے۔ ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ راجناتھ سنگھ کو یادداشت کی پیشکشی کے سلسلہ میں بہت جلد اجلاس منعقد کرتے ہوئے حکمت عملی کو قطعیت دیںگے۔

TOPPOPULARRECENT