Tuesday , December 19 2017
Home / شہر کی خبریں / گورنر کے خطبہ پر تحریک تشکر کے دوران شور و غل

گورنر کے خطبہ پر تحریک تشکر کے دوران شور و غل

وائی ایس آر کانگریس کا احتجاج ، آندھرا پردیش اسمبلی کی کارروائی ملتوی
حیدرآباد ۔ 8 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : آندھرا پردیش قانون ساز اسمبلی کے آج منعقدہ اجلاس میں گورنر کے خطبہ پر تحریک تشکر پر مباحث کے لیے اپوزیشن وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو بہت ہی کم وقت مختص کئے جانے پر برسر اقتدار تلگو دیشم اور اپوزیشن وائی ایس آر کانگریس پارٹی ارکان کے مابین ہوئے مباحث پر اسپیکر اسمبلی ڈاکٹر کے سیوا پرساد راؤ نے ایوان کی کارروائی کو 9 مارچ تک کے لیے ملتوی کرنے کا اعلان کیا ۔ قبل ازیں اسپیکر اسمبلی نے برسر اقتدار تلگو دیشم پارٹی اور اپوزیشن وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو گورنر کے خطبہ پر پیش کردہ تحریک تشکر پر مختص کردہ وقت میں ہی مباحث کو مکمل کرنے کے لیے پابند کیا اور زائد وقت نہ لینے کا مشورہ دیا جس پر قائد اپوزیشن مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی نے اسپیکر اسمبلی کے مشورہ پر سخت اعتراض کیا اور کہا کہ ایوان میں پائی جانے والی ایک ہی اپوزیشن جماعت وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو بھی مباحث کے لیے محدود وقت مقرر کرنا انتہائی غیر منصفانہ بات ہوگی ۔ انہوں نے اس مسئلہ پر اپنی شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کو بھی بات کرنے کا موقع فراہم نہ کرنا کوئی مناسب بات نہیں ہے ۔ جس پر برسر اقتدار تلگو دیشم کے رکن ڈی نریندر کمار نے اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ایوان میں مقررہ وقت میں ہی اظہار خیال کرنے کے طریقہ کار کا سابق چیف منسٹر ڈاکٹر وائی ایس راج شیکھر ریڈی کی زیر قیادت حکومت میں ہی آغاز ہوا تھا ۔ اس بات کا اظہار کرنے کے ساتھ ہی ایوان میں زبردست گڑبڑ ہنگامہ آرائی تلخ الفاظ کے استعمال کا آغاز ہوا اور پیدا شدہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے اسپیکر اسمبلی آندھرا پردیش ڈاکٹر کے شیوا پرساد راؤ نے گورنر کے خطبہ پر پیش کردہ تحریک تشکر پر مباحث 9 مارچ کو کیے جانے کا اظہار کرتے ہوئے ایوان کی کارروائی کو ملتوی کرنے کا اعلان کیا ۔ قبل ازیں مسٹر ڈی نریندر کمار تلگو دیشم رکن نے ایوان میں گورنر کے خطبہ پر تحریک تشکر پیش کی تھی اور اسی دوران اسپیکر اسمبلی نے مباحث کے لیے برسر اقتدار اور اپوزیشن جماعت وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے لیے وقت مقرر کرنے کا اعلان کیا تھا ۔ جس پر قائد اپوزیشن مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی نے اپنی سخت برہمی کا اظہار کیا تھا ۔۔

TOPPOPULARRECENT