Wednesday , July 18 2018
Home / شہر کی خبریں / گورنر کے خلاف ریمارکس و تنقیدوں کی مذمت

گورنر کے خلاف ریمارکس و تنقیدوں کی مذمت

اپوزیشن جماعتیں بشمول کانگریس بوکھلاہٹ کا شکار ، محمد فاروق حسین
حیدرآباد ۔ 22 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل محمد فاروق حسین نے کانگریس کے بشمول دوسری اپوزیشن جماعتوں پر گورنر کے خلاف ریمارکس و تنقیدیں کرنے کی سخت مذمت کرتے ہوئے دستوری عہدے کی توہین کرنے کا الزام عائد کیا ۔ محمد فاروق حسین نے کہا کہ نرسمہن غیر جانبداری سے خدمات انجام دے رہے ہیں اور دو تلگو ریاستوں تلنگانہ و آندھرا پردیش کے مشترکہ گورنر کی ذمہ داری بخوبی نبھا رہے ہیں ۔ دو دن قبل گورنر کالیشورم پراجکٹس کے تعمیری کاموں کا جائزہ لیتے ہوئے حکومت کی سنجیدگی کی ستائش کی ہے ۔ کالیشورم پراجکٹ کا پہلا مرحلہ جون تک مکمل ہوجائے گا ۔ پانی کی جو قلت ہے وہ ختم ہوجائے گی ۔ اچھے کاموں کی گورنر نے ستائش کی ہے جو اپوزیشن کو کھٹک رہی ہے ۔ محمد فاروق حسین نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کے ترقیاتی ، تعمیری و فلاحی کاموں سے اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئی ہے ۔ رائے دہی سے قبل کانگریس اپنی شکست قبول کرچکی ہے ۔ ریاست کے عوام ٹی آر ایس حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ہیں ۔ ریاست میں اب تک جتنے بھی انتخابات منعقد ہوئے حکمران جماعت نے بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی ہے ۔ اپنا محاسبہ کرنے اور غلطیوں کا ازالہ کرنے کے بجائے اپوزیشن جماعتیں غیر ضروری حکومت پر تنقیدیں کررہی ہیں ۔ ترقیاتی کاموں میں رکاوٹیں پیدا کررہی ہے ۔ مگر اس کا الٹا اثر ہوگا ۔ ترقیاتی کاموں میں رکاوٹ بننے والی کانگریس کو عوام 2019 میں پھر ایک مرتبہ سبق سکھائیں گے ۔ ریاست میں ٹی آر ایس چمپئین ہے اور آئندہ انتخابات میں اتنی بھاری اکثریت حاصل کرے گی کہ کانگریس کو اصل اپوزیشن کا موقف بھی حاصل نہیں ہوگا ۔ کانگریس پارٹی اصل اپوزیشن کا رول ادا کرنے میں پوری طرح ناکام ہوگئی ہے ۔ حکومت کی ہر اسکیم ملک کے لیے قابل تقلید ثابت ہورہی ہے ۔ ملک کی مختلف ریاستیں تلنگانہ حکومت کی اسکیمات پر عمل پیرا ہیں تعجب کی بات یہ ہے کہ وزیراعظم کے بشمول مرکزی وزراء تلنگانہ حکومت کی اسکیمات کی ستائش کررہے ہیں ۔ تلنگانہ کے بی جے پی قائدین اپنی ساکھ بچانے کے لیے حکومت پر تنقیدیں کررہے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT