Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / گورنمنٹ ڈگری کالج بودھن میں بی کام اردو میڈیم سیکشن کی اجازت

گورنمنٹ ڈگری کالج بودھن میں بی کام اردو میڈیم سیکشن کی اجازت

اردو داں حضرات کی غیرمعمولی کامیابی، مولانا آزاد ایجوکیشنل سوسائٹی کی کوشش کامیاب، جناب زاہد علی خاں سے ارکان سوسائٹی کا اظہارتشکر
حیدرآباد ۔ 25 جولائی (نمائندہ خصوصی) ریاست میں اردو داں حضرات اگر اردو کے فروغ کیلئے سنجیدہ کوشش کریں تو نہ صرف دفتری سطح پر اردو کا فروغ ہوسکتا ہے بلکہ تعلیمی اداروں میں اردو کو لازمی قرار دیئے جانے اور لازمی طور پر پڑھانے میں مدد مل سکتی ہے۔ اردو والوں کی اکثر یہ شکایت ہوتی ہیکہ کئی اردو میڈیم اسکولس کو ایک ہی اسکول میں ضم کیا جارہا ہے۔ اردو اسکولوں کی دوردراز علاقوں کو منتقلی عمل میں آرہی ہے۔ ارد ومیڈیم اسکولوں کو بنیادی سہولتوں سے محروم رکھا جارہا ہے۔ کالجوں میں اردو کلاسیس کو ایک منصوبہ بند انداز میں ختم کیا جارہا ہے لیکن اردو بولنے والے اور اردو کی ہمدردی کا دم بھرنے والے اردو کے فروغ کیلئے کمربستہ ہوجائیں، اس کیلئے ڈٹ جائیں تو کوئی متعصب عہدیدار، سیاستداں اور حکومت اردو میڈیم مدارس کو برخاست نہیں کرسکتی اور نہ ہی انہیں دوردراز مقامات کو منتقل کرتے ہوئے طلباء و اولیائے طلباء کو پریشان کرسکتی ہے۔ حال ہی میں حکومت نے گورنمنٹ ڈگری کالج بودھن میں جہاں مخلوط تعلیم کا انتظام ہے، بی کام اردو میڈیم سیکشن کو منظوری دی ہے۔ اس سلسلہ میں ایک جی او آر ٹی نمبر 158 اعلیٰ تعلیم (سی ای؍ اے ون) مورخہ 16 جولائی 2015ء جاری کیا گیا ہے۔ ان احکامات پر جاریہ تعلیمی سال سے عمل درآمد ہوگا۔ اس تمام کیلئے مسلمانان بودھن نے غیرمعمولی دلچسپی کا مظاہرہ کیا اور مولانا آزاد ایجوکیشنل سوسائٹی بودھن نے سال 2008ء سے مسلسل نمائندگی کا سلسلہ جاری رکھا۔ سوسائٹی کے عہدیداروں حسن محی الدین سنجری (معتمد)، عبدالوہاب سیفی (صدر)، قاضی خواجہ محی الدین جمیل صدر قاضی بودھن (جوائنٹ سکریٹری) کے علاوہ عابد احمد صوفی ایڈوکیٹ نے پرنسپل سکریٹری ہائیر ایجوکیشن اور کمشنر کالجیٹ ایجوکیشن رکن اسمبلی جناب شکیل عامر سے بھرپور نمائندگی کی اور تقریباً سات سال کی کوششوں کو بالآخر کامیابی مل ہی گئی۔ مولانا آزاد ایجوکیشنل سوسائٹی کے ایک وفد نے صدر قاضی بودھن قاضی خواجہ محی الدین جمیل کی قیادت میں ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں سے ملاقات کرتے ہوئے انہیں یہ خوشخبری سنائی اور بتایا کہ مسلمانان بودھن کی کوشش کامیاب ہوئی اور روزنامہ سیاست کا بھی اس میں اہم رول رہا۔ جناب حسن محی الدین سنجری کے مطابق ایڈیٹر سیاست نے سال 2004ء میں سیاست ملت فنڈ سے گورنمنٹ ڈگری کالج بودھن میں اردو بی کام سیکشن کیلئے 30 ہزار روپئے کارپس فنڈ کے طور پر پیش کئے تھے مابقی 30 ہزار روپئے دیگر ہمدردان ملت کی طرف سے فراہم کئے گئے۔ واضح رہیکہ بودھن میں 40 فیصد مسلم آبادی ہے جبکہ اطراف و اکناف میں بھی مسلمانوں کی کافی تعداد ہے۔ امید ہیکہ بی کام اردو میڈیم سیکشن سے درجنوں طلباء وطالبات کو فائدہ ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT