Saturday , November 25 2017
Home / ہندوستان / گورکھالینڈحامیوں نے جی ٹی اے کا دفتر نذرآتش کردیا

گورکھالینڈحامیوں نے جی ٹی اے کا دفتر نذرآتش کردیا

چوک بازار میں دھماکہ ‘ مرکزی وزیر داخلہ کو تحریک کے قائد کا مکتوب

دارجلنگ(مغربی بنگال) ۔20اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) گورکھا جن مکتی مورچہ کے صدر بمل گورمنگ کے خلاف غیرقانونی سرگرمیاں (انسدادی ) قانون کے تحت ایکمقدمہ کالمپونگ پولیس اسٹیشن میں درج کرلیا گیا ‘ جب کہ قصبہ دارجلنگ کے چوک بازار میں دھماکہ ہوا ۔ پولیس اسٹیشن پر کل رات 11بجے شب دستی بم پھینکا گیا تھا جس سے ایک شہری والینٹر ہلاک اور دیگر دو زخمی ہوگئے تھے ۔ زخمیوں کو بعدازاں دواخانہ میں شریک کردیا گیا ۔ گورکھا لینڈ علاقائی انتظامیہ ( جی ٹی اے ) کے دفتر کو مبینہ طور پر گورکھالینڈ کے حامیوں نے کل رات کالمپونگ میں نذرآتش کردیا ۔ دارجلنگ میں صورتحال کشیدہ ہے ۔ کیونکہ گورکھا جن مکتی مورچہ کی جانب سے علحدہ گورکھا لینڈ ریاست کے مطالبہ پر غیرمعینہ مدت کی ہڑتال کا آج 67واں دن ہے ۔ دستی بم حملہ کالمپونگ پولیس اسٹیشن پر اور قصبہ دارجلنگ میں کیا گیا ۔ ایسے واقعات قصبہ دارجلنگ میں پہلی بار پیش آئے ہیں ۔ جب کہ دو ماہ قبل غیر معینہ مدت کی ہڑتال کا آغاز ہوا تھا ۔ پولیس کے سینئر عہدیدار نے کہا کہ صورتحال پر گہری نظر رکھی گئی ہے ۔ داخلے اور اخراج کے ہر مقام پر نگرانی کی جارہی ہے ۔ ایک فارنسک ٹیم پولیس اسٹیشن کا دورہ کرے گی ‘ تاہم مورچہ کی قیادت نے پولیس اسٹیشن پر حملے کی مذمت کی ہے ۔ پارٹی کے سینئر قائد نے کہا کہ پولیس اسٹیشن پر دستی بم حملہ کی مذمت کی جاتی ہے ۔ یہ ان افراد کی کارستانی ہے جو نہیں چاہتے کہ علحدہ ریاست گورکھا لینڈ قائم ہوجائے ۔ کل رات چوک بازار میں بھی یہ دھماکہ ہوا تھا جس کے بعد مورچہ کے قائد گورنگ نے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کو ایک مکتوب روانہ کیا اور ان سے مطالبہ کیا کہ قومی محکمہ تحقیقات ( این آئی اے ) کی جانب سے اس واقعہ کی تفصیلی تحقیقات کی جائے ۔ مغربی بنگال کے وزیر داخلہ گوتم دیب نے کہا کہ دھماکوں کے پس پردہ جو بھی شخص ہو اس کو بخشا نہیں جائے گا اور قانون اپنا کام کرے گا ۔ پولیس نے جس علاقہ میں تلاشی مہم کا آغاز کیا یہاں سے آج ایک احتجاجی جلوس نکالا گیا جس کا آغاز دارجلنگ سے پہاڑیوں سے ہوا تھا ۔ جلوس میں کسی بھی سیاسی پارٹی نے شرکت نہیںک ی ۔

TOPPOPULARRECENT