Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / گوشت پر پابندی کے خلاف راج ٹھاکرے کا احتجاج ایم این ایس کارکنوں نے جین سوسائیٹی کے باہر گوشت کھایا

گوشت پر پابندی کے خلاف راج ٹھاکرے کا احتجاج ایم این ایس کارکنوں نے جین سوسائیٹی کے باہر گوشت کھایا

ممبئی ۔ /13 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) راج ٹھاکرے کے زیرقیادت مہاراشٹرا نونرمان سینا (ایم این ایس) نے ’پریوشن‘ تہوار کے موقع پر گوشت کی فروخت پر امتناع کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے جین دھرم کی کثیرآبادی والی ہاؤزنگ سوسائیٹی کے قریب گوشت سے تیار شدہ غذاؤں پر مبنی ’نان ویج‘ فوڈ اسٹال منعقد کیا ۔ ایم این ایس کارکنوں نے جین برادری کے تہوار کے موقع پر گوشت کی فروخت پر امتناع کے خلاف احتجاجی نعرہ بازی کی اور نیم مضافاتی علاقے ویلے پارلے کی جین ہاؤزنگ سوسائیٹی کے باہر برسرعام گوشت کھایا ۔ ایم این ایس کے سربراہ راج ٹھاکرے نے کہا کہ جین افراد ریاست کی سرکاری پالیسیوں کے بارے میں فیصلہ نہیں کرسکتے  اور اس عہد کا اظہار کیا تھا کہ ریاست میں گوشت پر امتناع کے دوران گوشت فروخت کرنے والوں کی مدد کی جائے گی ۔ اس دوران جین سادھوؤں نے شیوسینا کے صدر ادھوٹھاکرے سے آج ان کی رہائش گاہ ’ماتوشری‘ پہونچکر ملاقات کی۔ جین قائدین نے شیوسینا کے ترجمان روزنامہ ’سامنا‘ کے اس اداریہ پر ناراضگی ظاہر کی جس میں شیوسینا نے جین افراد کو وارننگ دی تھی کہ وہ اپنا غذائی ضابطہ دیگر طبقات پر مسلط کرنے کی کوشش نہ کریں ۔ سیربھیاندر میونسپل کارپوریشن نے حکمراں بی جے پی کی طرف سے پیش کردہ تحریک پر اس علاقہ میں مویشیوں کے ذبیحہ اور گوشت کی فروخت پر آٹھ دن کی پابندی عائد کی تھی لیکن مختلف گوشوں سے تنقیدوں کے بعد اس پابندی کو گھٹاکر صرف دو دن کیلئے برقرار رکھا گیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT