Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / گٹلہ بیگم پیٹ کے قابضین کو ہائی کورٹ کی سرزنش

گٹلہ بیگم پیٹ کے قابضین کو ہائی کورٹ کی سرزنش

احکامات کی خلاف ورزی پر جج کی برہمی ، وقف بورڈ کو آئندہ پیشی میں ثبوت پیش کرنے کی ہدایت
حیدرآباد ۔ 13 ۔جون (سیاست نیوز) حیدرآباد ہائی کورٹ میں آج گٹلہ بیگم پیٹ اوقافی اراضی کے مقدمہ میں تلنگانہ وقف بورڈ کو عدالت کی تائید حاصل ہوئی اور غیر مجاز قابضین کی سرزنش کی گئی ۔ جسٹس ایس وی بھٹ نے اوقافی اراضی پر عدالت کے سابقہ احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے خانگی اداروں کی جانب سے تعمیری سرگرمیوں کو جاری رکھنے پر برہمی کا اظہار کیا۔ جج نے تلنگانہ وقف بورڈ کو ہدایت دی کہ وہ مقدمہ کی آئندہ پیشی کے موقع پر غیر مجاز تعمیرات کے سلسلہ میں تصاویر کے ساتھ ثبوت داخل کریں۔ اپریل کے آخری ہفتہ میں جسٹس نوین راؤ نے جوں کا توں موقف برقرار رکھنے کی ہدایت دی تھی ۔ انہوں نے تعمیری سرگرمیوں کو روک دینے کے احکامات جاری کئے تھے ، اس کے باوجود تعمیری سرگرمیاں تیزی سے جاری رہیں۔ جسٹس ایس وی بھٹ کے اجلاس پر آج جیسے ہی سماعت کا آغاز ہوا ، غیر مجاز قابضین نے عدالت سے وقت مانگا تاکہ وقف ادارہ کو مقدمہ میں فریق بنایا جائے ۔ وقف بورڈ کے سینئر کونسل شفیق مہاجر نے عدالت کو بتایا کہ دراصل مسئلہ کو طوالت دینے کیلئے وقت مانگا جارہا ہے۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ اپریل کے آخری ہفتہ میں ہائی کورٹ کی تعطیلات سے قبل جب وقف بورڈ کے گزٹ نوٹیفکیشن کو چیلنج کرتے ہوئے درخواست داخل کی گئیں تو جسٹس نوین راؤ نے جوں کا توں موقف رکھنے کی ہدایت دی اور تعمیری کام بند کرنے کا حکم دیا تھا ۔ شفیق مہاجر نے بتایا کہ عدالت کے احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تیزی سے تعمیرات جاری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اراضی پر موجود مسجد کے اطراف کے علاقہ کو گھیر لیا گیا ہے اور نماز عید الفطر کی ادائیگی میں مشکلات پیش آسکتی ہے۔ جسٹس ایس وی بھٹ نے درخواست گزاروں پر برہمی کا اظہار کیا اور استفسار کیا کہ عدالت کے احکامات کی خلاف ورزی کس طرح کی گئی ۔ انہوں نے غیر مجاز قابضین کو کارروائی کا انتباہ دیتے ہوئے وقف بورڈ کو ہدایت دی کہ آئندہ سماعت کے موقع پر تصاویر اور دیگر ثبوت پیش کریں تاکہ عدالت کو فیصلہ سنانے میں سہولت ہو۔ عدالت کو بتایا گیا کہ غیر مجاز قابضین کے خلاف بورڈ کی جانب سے تحقیر عدالت کا مقدمہ دائر کردیا گیا ہے۔ ایک اور مقدمہ تیاری کے مرحلہ میں ہے ، جو بہت جلد دائر کردیا جائے گا۔ حیدرآباد ہائی کورٹ کے آج کے فیصلہ سے وقف بورڈ کے موقف کو تقویت حاصل ہے۔ بورڈ نے 90 ایکر اراضی کو وقف قرار دیتے ہوئے گزٹ نوٹیفکیشن جاری کیا تھا۔ بورڈ نے غیر مجاز تعمیرات کے سلسلہ میں گوگل سے تصاویر حاصل کی ہے ۔ اس کے علاوہ کیمرہ سے فلم بندی اور تصویر کشی کی گئی۔ گٹلہ بیگم پیٹ کی اراضی کے تحفظ کے سلسلہ میں صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم اور ڈائرکٹر اقلیتی بہبود شاہنواز قاسم نے خصوصی دلچسپی دکھائی اور اسٹانڈنگ کونسل فرحان اعظم کے علاوہ سینئر کونسل شفیق مہاجر کی خدمات حاصل کی گئیں۔ وکلاء نے بتایا کہ آئندہ سماعت کے موقع پر غیر مجاز تعمیرات اور قبضوں کے بارے میں ثبوت پیش کیا جائیگا ۔

TOPPOPULARRECENT