Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / گینگسٹر نعیم کی چالاکی سے دوستوں اور دشمنوں کو یکساں پریشانی

گینگسٹر نعیم کی چالاکی سے دوستوں اور دشمنوں کو یکساں پریشانی

شاطر مجرم کی انکاؤنٹر میں موت پر دشمنوں نے راحت کی سانس لی لیکن فائدہ اٹھانے والوں کو نئی مصیبت

٭ نعیم اپنے دوستوں، سیاسی قائدین اور پولیس عہدیداروں کے
ٹیلی فون ریکارڈ کرتا تھا،کسی پر بھروسہ نہ کرنا اہم اُصول تھا
٭ ملاقاتوں کے ویڈیو کلپس بھی بنائے گئے تھے
٭ جدید ٹکنالوجی کا ماہرانہ استعمال، ڈائری سے زیادہ پریشان کن

حیدرآباد۔/17اگسٹ، ( سیاست نیوز) بدنام زمانہ گینگسٹر نعیم عرف بھونگیر نعیم کی انکاؤنٹر میں ہلاکت کے بعد جاری پولیس تحقیقات میں حیرت انگیز انکشافات سامنے آرہے ہیں۔نعیم کی زندگی مخالفین کیلئے جس قدر خطرناک تھی اب نعیم کی موت اس کے حامیوں اور ہمدردوں کیلئے اسی قدر خطرناک ہوگئی ہے۔ نکسلائیٹ سے گینگسٹر بننے والا نعیم ہر ایک سے ملاقات کا ریکارڈ رکھتا تھا اور ٹکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے وہ ویڈیو گرافی اور فون ریکارڈنگ بھی کیا کرتا تھا۔ ایس آئی ٹی کی تازہ تحقیقات میں اس حیرت انگیز حقیقت کا انکشاف ہوا ہے۔ باوثوق ذرائع کے مطابق نعیم اپنے انجام سے واقف تھا اور ساتھیوں کو ہمیشہ یہ بات کہتا تھا کہ جنہیں ہم سے نقصان ہوا ہے اور جو لوگ ہم سے فائدہ حاصل کررہے ہیں یہ دونوں ہمارے لئے برابر کے خطرناک ہیں۔ نعیم پولیس اور سیاستدانوں کی نیت سے بخوبی واقف تھا اور اپنے ساتھیوں کو مشورہ دیتا تھا کہ وہ کبھی اس بات کے اطمینان میں نہ رہیں کہ جو لوگ ہمیں استعمال کررہے ہیں وہ لوگ ہمیں کبھی فائدہ پہنچائیں گے۔ نعیم کے ٹھکانوں پر دھاوا کرتے ہوئے پولیس نے جو معلوماتی ذخیرہ اور کمپیوٹرس و الیکٹرانکس اشیاء سے جو ذخیرہ حاصل کیا ہے وہ تقریباً چار ہزار فلموں کے برابر کا ہے۔ پولیس اب اس کی تفصیلی جانچ میں مصروف ہوگئی ہے۔ ایک ڈائری سے پریشان انتظامی اُمور کے اعلیٰ عہدیدار اب اس ذخیرے کے بعد مزید اُلجھنوں کا شکار ہوں گے۔ باوثوق ذڑائع کے مطابق نعیم کے جو بینک کھاتے تھے وہ افراد خاندان کے نام سے زیادہ تھے۔ ذرائع کے مطابق بیوی حسینہ اور نعیم کی بہن سمیرا ( آپا) کے نام بینک کھاتوں کی کثرت پائی جاتی ہے۔

ایک اندازے کے مطابق تقریباً 250 بینک کھاتے موجود  ہیں۔ اپنے قریبی چند ساتھیوں کے بعد نعیم کا سب سے زیادہ بھروسہ اس کی آپا پر تھا۔ پولیس کے ہاتھ کٹھ پتلی اورپولیس و سیاستدانوں کے اشاروں پر کام کرنے کے الزامات نعیم اور اس کی ٹولی پر پائے جاتے ہیں باوجود اس کے نعیم ان پر بھروسہ نہیں کرتا تھا۔شائد یہی وجہ تھی کہ نعیم اپنے ساتھیوں کو ہمیشہ نصیحت کرتا تھا کہ یہ لوگ کبھی بھی ہاتھ چھوڑ سکتے ہیں۔ ایس آئی ٹی کی تحقیقات میں اس حیرت انگیز انکشاف کے بعد شائد ان افراد کی خیر نہیں جو کبھی نعیم کی مدد حاصل کرچکے ہیں اور اس کا ساتھ دے چکے ہیں۔ چونکہ ان کے یہاں انکار کرنے کا کوئی راستہ نہیں، جن سے نعیم ملاقات اور معاملتیں کرتا تھا انہیں علم نہیں تھا کہ نعیم ان کی ریکارڈنگ کررہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ضلع نلگنڈہ اور حیدرآبادکے نواحی علاقوں سے نعیم ٹولی کے خلاف شکایتوں کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT