Monday , June 18 2018
Home / ہندوستان / ہجوم کے ہاتھوں ہلاک قبائیلی کے ورثاء کو چیف منسٹر کا تیقن

ہجوم کے ہاتھوں ہلاک قبائیلی کے ورثاء کو چیف منسٹر کا تیقن

چیف منسٹر کیرالا نے مکان پہونچ کر پرسہ دیا، خاطیوں کیخلاف کارروائی کا عہد
اٹاپاڈی (کیرالا) 2 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر کیرالا پی وجین آج اُس قبائیلی نوجوان کے مکان گئے جسے گزشتہ ماہ یہاں مبینہ طور پر غذائی اشیاء چوری کرنے کی پاداش میں ہجوم نے زدوکوب کرتے ہوئے ہلاک کرڈالا۔ چیف منسٹر نے مقتول کی فیملی کو یقین دلایا کہ ملزمین کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ چیف منسٹر نے وزیر صحت کے کے شیلجا کے ہمراہ قبائیلی خاندان کے پاس گئے اور 30 سالہ مقتول مدھو کی ماں، بہن اور اُس کے دیگر رشتہ داروں سے ملاقات کرتے ہوئے اُنھیں تیقن دیا۔ اِس کیس میں ابھی تک کم از کم 16 افراد گرفتار کئے جاچکے ہیں۔ وجین نے فیس بُک پوسٹ میں بتایا کہ وہ مدھو کے مکان گئے اور اُس کے لواحقین کو پرسہ دیا نیز اُنھیں یقین دلایا کہ اِس کیس میں تحقیقات درست سمت میں بڑھ رہی ہے اور حکومت ملزمین کو قانون کے مطابق کیفر کردار تک پہنچانے کے تمام تر جتن کرے گی۔ جو کوئی بھی سوشل میڈیا میں کینہ پرور پروپگنڈہ میں ملوث ہیں اُنھیں بخشا نہیں جائے گا۔ چیف منسٹر نے قبائیلیوں کے لئے سہولتیں فراہم کرنے کے تعلق سے حکومتی عہدیداروں کے ساتھ بات چیت بھی کی۔

TOPPOPULARRECENT