Saturday , December 15 2018

ہریانہ میں مذہبی عمارت کی توسیع پر تنازعہ ، دو فرقوں میں تشدد

پلوال ۔ 13 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ہریانہ کے ضلع پلوال میں ہتین کے مقام پر مذہبی عمارت کی توسیع کے مسئلہ پر تنازعہ کھڑا ہوگیا اور دو فرقوں میں جھڑپ ہوگئی۔ حکام نے یہاں کرفیو نافذ کردیا ہے۔ پلوال ڈپٹی کمشنر پولیس نے بتایا کہ صورتحال بتدریج معمول پر آرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دو فرقوں کے ارکان نے مذہبی عمارت پر تنازعہ کے بعد ایک دوسرے کو سنگ

پلوال ۔ 13 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ہریانہ کے ضلع پلوال میں ہتین کے مقام پر مذہبی عمارت کی توسیع کے مسئلہ پر تنازعہ کھڑا ہوگیا اور دو فرقوں میں جھڑپ ہوگئی۔ حکام نے یہاں کرفیو نافذ کردیا ہے۔ پلوال ڈپٹی کمشنر پولیس نے بتایا کہ صورتحال بتدریج معمول پر آرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دو فرقوں کے ارکان نے مذہبی عمارت پر تنازعہ کے بعد ایک دوسرے کو سنگباری کا نشانہ بنایا اور املاک کو نقصان پہنچایا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں اسمبلی انتخابات سے قبل مذہبی عمارت اور سرکاری اراضی پر اس کی توسیع کے سلسلہ میں دو فرقوں کے مابین تنازعہ چلا آرہا ہے۔ یہ مذہبی عمارت چھوٹی ہے اور توسیع میں سرکاری اراضی کے کچھ حصہ پر قبضہ کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دو فرقوں کے ارکان پر مشتمل پیس کمیٹی قائم کی گئی تھی تاکہ بات چیت کے ذریعہ اس مسئلہ کو حل کیا جاسکے۔ کمیٹی نے انتخابات کے بعد سرکاری اراضی پر قابض حصہ کو ہٹانے کا فیصلہ کیا تھا لیکن اس عمل میں ایک شخص نے شرانگیزی کی اور پھر افواہیں پھیل گئی جس کے نتیجہ میں کل لوٹ مار اور تشدد کے واقعات پیش آئے۔ انہوں نے بتایا کہ تقریباً 40 دکانات کو نقصان پہنچا اور کئی گاڑیاں نذرآتش کی گئی۔

TOPPOPULARRECENT