Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ہریتاہرم پروگرام، اقلیتی اداروں کا مایوس کن مظاہرہ

ہریتاہرم پروگرام، اقلیتی اداروں کا مایوس کن مظاہرہ

حیدرآباد۔/14جولائی، ( سیاست نیوز) اقلیتی بہبود کے ادارے جس طرح اپنی عدم کارکردگی کیلئے شہرت رکھتے ہیں اس کا ایک مظاہرہ چیف منسٹر کی خصوصی دلچسپی سے متعلق پروگرام ہریتا ہارم میں بھی دیکھنے کو ملا۔ حکومت نے تمام سرکاری اداروں کو اس پروگرام میں شمولیت کیلئے نہ صرف پابند کیا بلکہ ہر ادارہ کیلئے ضلع واری سطح پر شجرکاری کا نشانہ مقرر کیا گیا۔ اقلیتی بہبود کیلئے بھی ضلع واری سطح پر ہریتا ہارم کا ایکشن پلان روانہ کردیا گیا لیکن 8 جولائی کو شروع ہوئے اس پروگرام سے آج تک اقلیتی اداروں کا مظاہرہ انتہائی مایوس کن ہے۔ اضلاع کی حالت تو چھوڑیئے خود حیدرآباد میں اقلیتی ادارے ابھی تک اس پروگرام کے سلسلہ میں متحرک نہیں ہوئے جبکہ 20جولائی پہلے مرحلہ کے پروگرام کی آخری تاریخ ہے۔ حج ہاوز کے احاطہ میں 100 پودے لگانے کا اعلان کیا گیا اور سکریٹری اقلیتی بہبود اور دیگر عہدیداروں نے رسمی طور پر پروگرام میں شرکت کرتے ہوئے ایک، ایک پودا لگایا لیکن ان کے جانے کے بعد یہ کام دھرے کا دھرا رہ گیا اور آج تک بھی 100 پودے نہیں لگائے گئے اور پودے زمین میں بوئے جانے کا انتظار کررہے ہیں۔ اس بارے میں جب وقف بورڈ کے عہدیداروں سے پوچھا گیا تو انہوں نے بتایا کہ 20جولائی تک یہ کام مکمل کرلیا جائے گا۔ دوسری طرف چیف سکریٹری ڈاکٹر راجیو شرما نے اس مسئلہ پر تمام محکمہ جات کے ساتھ ہر منگل کے دن ویڈیو کانفرنس کا فیصلہ کیا تاکہ تمام اضلاع سے ہر محکمہ کی کارکردگی حاصل کی جاسکے۔ پہلی ویڈیو کانفرنس کے موقع پر وقف بورڈ نے تمام 10 اضلاع کے انسپکٹر آڈیٹرس اور ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسرس سے ربط قائم کرتے ہوئے شجرکاری کی تفصیلات جاننے کی کوشش کی تو انہیں یہ جان کر حیرت ہوئی کہ ایک بھی عہدیدار شجرکاری کی تعداد بتانے سے قاصر ہے۔ اضلاع کے عہدیداروں نے جواب دیا کہ وہ معلومات حاصل کرتے ہوئے اعداد و شمار روانہ کریں گے۔ بعض اضلاع میں یہ کام شروع نہیں ہوا تھا۔ الغرض چیف سکریٹری کو ضلع واری سطح کے اعداد و شمار پیش کرنے کیلئے عہدیداروں نے فرضی اعداد و شمار تیار کئے اور انہیں سکریٹری اقلیتی بہبود کے ذریعہ چیف سکریٹری تک پہنچادیا گیا۔ جس وقت یہ فرضی اعداد و شمار تیار ہورہے تھے عہدیدار آپس میں یہ کہتے ہوئے سنے گئے کہ ان اعداد و شمار کی جانچ کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا لہذا کچھ نہ کچھ تعداد پیش کردی جائے۔

TOPPOPULARRECENT