Wednesday , December 12 2018

ہریش راؤ اور کے ٹی آر کی نئی دہلی میں مرکزی وزراء سے ملاقات

کالیشورم کا معائنہ کرنے نتن گڈکری کو دعوت ،10 ہینڈلوم کلسٹرس کیلئے سمرتی ایرانی سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 17 ۔ جولائی (سیاست نیوز) ریاستی وزراء ٹی ہریش راؤ اور کے ٹی راما راو آج دہلی کے دورہ پر ہیں، ہریش راؤ نے مرکزی وزیر ٹرانسپورٹ و آبی وسائل نتن گڈکری سے ملاقات کی اور کالیشورم پراجکٹ کو قومی پراجکٹ کا درجہ دیتے ہوئے مرکز سے فنڈس کی منظوری کی درخواست کی۔ وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی آر نے مرکزی وزیر ٹکسٹائلس سمرتی ایرانی سے ملاقات کرتے ہوئے ریاست میں ہینڈلوم کے 10 کلسٹرس منطور کرنے کی نمائندگی کی۔ ہریش راؤ نے پارلیمانی پارٹی لیڈر جتیندر ریڈی دہلی میں تلنگانہ کے نمائندے وینو گوپال چاری اور دیگر ارکان پارلیمنٹ کے ہمراہ نتن گڈکری سے ملاقات کرتے ہوئے کالیشورم پراجکٹ کیلئے درکار تمام منظوریوں پر اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ کالیشورم پراجکٹ کی تکمیل کیلئے درکار تمام کلیئرنس مرکز سے حاصل ہوچکے ہیں، اس پس منظر میں وہ پراجکٹ کو قومی پراجکٹ کا درجہ دینے کی نمائندگی کر رہے ہیں۔ ہریش راؤ نے کہا کہ مرکز کو چاہئے کہ پراجکٹ کی عاجلانہ تکمیل کیلئے فنڈس کی اجرائی عمل میں لائیں۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ مرکزی وزیر نے نمائندگیوں پر ہمدردانہ غور کا تیقن دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کالیشورم پراجکٹ کا معائنہ کرنے کیلئے مرکزی وزیر کو تلنگانہ دورہ کی دعوت دی گئی ہے۔ کالیشورم ملک کا منفرد اور عظیم پراجکٹ ہے جو تیزی سے تکمیل کی سمت گامزن ہے۔ خشک سالی سے متاثرہ اضلاع میں جہاں کسانوں کی خودکشی کے زیادہ واقعات پیش آرہے تھے ، اس پراجکٹ کا آغاز کیا گیا ۔ پراجکٹ کے ذریعہ 37 لاکھ ایکر اراضی کو سیرآب کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ نتن گڈکری کے تعاون کے سبب مرکز سے تمام درکار منظوریاں حاصل ہوئی ہیں اور پراجکٹ کا کام تیزی سے جاری ہے ۔ ہریش راؤ نے امید ظاہر کی کہ نتن گڈکری جلد تلنگانہ کا دورہ کرتے ہوئے پراجکٹ کا معائنہ کریں گے۔ دوسری طرف کے ٹی راما راؤ نے مرکز سے خواہش کی کہ تلنگانہ کیلئے 10 ہینڈلوم کلسٹرس منظور کئے جائیں۔ کلکسٹرس کے قیام سے کھمم اور محبوب نگر اضلاع کو فائدہ ہوگا۔ کے ٹی آر نے مرکزی وزیر کو تلنگانہ میں ہینڈلوم کاشتکاروں کے مسائل سے واقف کرایا۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کے ٹی آر نے کہا کہ ہینڈلوم بافندوں کے مسائل سے مرکزی وزیر کو آگاہ کیا گیا ہے اور اس شعبہ کو عصری بنانے کیلئے مرکز سے امداد کی خواہش کی گئی ۔ سمرتی ایرانی نے تلنگانہ حکومت سے ممکنہ تعاون کا یقین دلایا ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت ہینڈلوم ویورس کی بھلائی کیلئے کئی اقدامات کر رہی ہے۔ حکومت کی جانب سے بافندوں کو 50 فیصد سبسیڈی فراہم کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے بافندوںکی بھلائی کیلئے 12000 کروڑ پر مشتمل اسکیمات کا آغاز کیا ہے ۔ انہوں نے مرکز سے فنڈس کی اجرائی میں تاخیر کے سبب ہونے والی مشکلات سے واقف کرایا۔

TOPPOPULARRECENT