Wednesday , November 21 2018
Home / شہر کی خبریں / ہریش رائو کا ریکارڈ خود وہی توڑ سکتے ہیں: ای راجندر

ہریش رائو کا ریکارڈ خود وہی توڑ سکتے ہیں: ای راجندر

ترقیاتی سرگرمیوں میں سدی پیٹ سرفہرست، انتخابی مہم سے ہریش رائو کا خطاب
حیدرآباد۔9 نومبر (سیاست نیوز) وزیر فینانس ای راجندر نے کہا کہ سدی پیٹ میں ہریش رائو کو جو اکثریت حاصل ہوئی ہے اسے کوئی اور توڑ نہیں سکتا۔ ہریش رائو کو اکثریت کا ریکارڈ خود توڑنا ہوگا۔ وزیر فینانس آر سدی پیٹ میں پسماندہ طبقات کے ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ انتخابات میں وزیر آبپاشی نے تقریباً ایک لاکھ ووٹوں کی اکثریت حاصل کی تھی جو ریاست کے تمام حلقہ جات میں سب سے زیادہ ہیں۔ مجوزہ انتخابات میں کسی اور حلقے سے اس قدر اکثریت کا حصول کسی اور کے بس کی بات نہیں۔ ہریش رائو خود اپنی اکثریت کا ریکارڈ توڑ سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سدی پیٹ میں جو ترقیاتی کام انجام دیئے گئے ان کی مثال کسی اور ضلع میں نہیں مل سکتی۔ عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی میں ہریش رائو کو سبقت حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی اور فلاحی اقدامات کے سبب ٹی آر ایس عوام کے دلوں پر راج کررہی ہے۔ انتخابات میں ٹی آر ایس کی کامیابی کو کوئی بھی طاقت روک نہیں پائے گی ۔ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیر آبپاشی ہریش رائو نے کہا کہ کے سی آر کے اقتدار میں قدم قدم پر ترقی اور فلاحی اقدامات دکھائی دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی کا دوسرا نام ٹی آر ایس ہے جبکہ مہا کوٹمی کا مطلب بحران ہے۔ کوٹمی کے برسر اقتدار آنے کی صورت میں تلنگانہ پھر ایک بار پسماندگی کا شکار ہوجائے گا۔ ہریش رائو نے ٹکٹوں کی تقسیم کے مسئلہ پر مہاکوٹمی میں جاری تنازعہ کا مذاق اڑایا اور کہا کہ کوٹمی کے قائدین دلی کے چکر کاٹتے ہوئے راہول گاندھی کے آگے دست بستہ کھڑے ہیں۔ تلنگانہ کی تشکیل میں آخری لمحہ تک مخالفت کرنے والے چندرا بابو نائیڈو سے کانگریس نے دوستی کرلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کو آندھرائی طاقتوں کے اقتدار سے روکنے کے لیے ٹی آر ایس کا دوبارہ برسر اقتدار آنا ضروری ہے۔ تلنگانہ سے متعلق فیصلے دہلی یا امراوتی میں نہیں بلکہ خود تلنگانہ میں ہوں گے۔ تلنگانہ کے 7 منڈلوں کو بی جے پی نے آندھراپردیش میں ضم کرتے ہوئے ناانصافی کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح ترقی میں سدی پیٹ کو سبقت حاصل ہے، انتخابی اکثریت میں بھی سبقت ملنی چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT