Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / ہزاروں ایکر وقف اراضی کا معاوضہ10 روپئے

ہزاروں ایکر وقف اراضی کا معاوضہ10 روپئے

حیدرآباد کی اہم درگاہوں کی اراضیات حکومت کی تحویل میں

حیدرآباد کی اہم درگاہوں کی اراضیات حکومت کی تحویل میں
حیدرآباد ۔ 2 ۔ مارچ (سیاست نیوز) حیدرآباد میں حکومت کی تحویل میں موجود کئی قیمتی اوقافی اراضیات کا ماہانہ معاوضہ صرف دو روپئے ہے جبکہ بعض اراضیات کے استعمال کیلئے حکومت 10 تا 20 روپئے ادا کر رہی ہے۔ اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود آندھراپردیش شیخ محمد اقبال کی پریس کانفرنس میں وقف بورڈ کے عہدیداروں نے یہ دلچسپ انکشاف کیا۔ انہوں نے بتایا کہ وقف بورڈ کی تشکیل سے قبل اس وقت کی حکومت نے ہزاروں ایکر اراضیات کو اپنی تحویل میں لے لیا تھا اور وقف بورڈ کے قیام کے بعد اسے وقف بورڈ کے حوالے نہیں کیا گیا۔ عہدیداروں نے بتایا کہ حیدرآباد کی مشہور درگاہوں حضرت شاہ راجو قتال حسینیؒ مصری گنج، حضرت شاہ خاموشؒ نامپلی اور حضرت میراں حسینیؒ لنگر حوض کے تحت موجود اراضیات کو آزادی سے قبل حکومت نے حاصل کرلیا تھا اور اب 10 تا 20 روپئے ماہانہ بطور گرانٹ ادا کیا جارہا ہے۔ بعض ادارے تو ایسے ہیں جنہیں قیمتی اراضیات کے بدلے ماہانہ صرف دو روپئے حاصل ہورہے ہیں۔ حیدرآباد کے علاوہ تلنگانہ کے اضلاع میں اس طرح کی اراضیات کی تفصیلات اکھٹا کی جارہی ہیں۔ شیخ محمد اقبال نے انکشاف کیا کہ اننت پور ضلع کے پینو کنڈہ میں 3000 ایکر، چتور میں 1700 اور درگاہ حضرت اسحاق مدنی سے متصل مسجد عالمگیر ضلع وشاکھاپٹنم کے تحت 2162 ایکر اراضی کی نشاندہی کی گئی ہے۔ دیگر اضلاع میں بھی یہ کام جاری ہے۔

TOPPOPULARRECENT