Thursday , December 13 2018

ہم انتخابات کا سامنا کرنے سے خوفزدہ نہیں ہیں : عآپ

مرکز پر انتقامی کارروائی کا الزام ۔ گوپال رائے کا بیان ۔ بی جے پی کا امکانی انتخاب پر غور بھی شروع
نئی دہلی 20 جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی نے آج ادعا کیا کہ 20 ارکان اسمبلی کو نا اہل قرار دینے الیکشن کمیشن کی سفارش کے ذریعہ اسے نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔ پارٹی نے تاہم کہا کہ وہ انتخابات کا سامنا کرنے سے خوفزدہ نہیں ہے ۔ عام آدمی پارٹی دہلی یونٹ کے صدر گوپال رائے نے الزام عائد کیا کہ الیکشن کمیشن نے اپنی سفارشات صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کو روانہ کرنے سے قبل پارٹی کے موقف کی سماعت نہیں کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ غیر جمہوری اقدام ہے ۔ مرکز کی جانب سے دہلی کے عوام اور حکومت اور چیف منسٹر سے انتقال لیا جا رہا ہے ۔ پارٹی لیڈر نے کہا کہ تمام 11 ریاستوں میں پارلیمانی سکریٹریز کا تقرر عمل میں لایا گیا ہے لیکن نشانہ صرف عام آدمی پارٹی کو بنایا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ دوہرے معیارات ہیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا دستور کا سب پر اطلاق نہیں ہوتا ؟ ۔ صرف ہمیں نشانہ بنایا جا رہا ہے اور یہ برطانوی راج سے زیادہ بدتر ہے ۔ دہلی ہائیکورٹ میں عام آدمی پارٹی کے ارکان اسمبلی کو نا اہل قرار دینے کے مسئلہ پر پیر کو سماعت ہونے والی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم انصاف حاصل کرنے تمام جمہوری اداروں سے رابطہ کرینگے ۔ انہوں نے عام آدمی پارٹی کے عوام سے رابطوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم انتخابات کا سامنا کرنے سے خوفزدہ نہیں ہیں۔ عوام ہماری قسمت کا فیصلہ کرینگے ۔ اس دوران دہلی بی جے پی نے 20 حلقوں کے امکانی انتخاب کے تعلق سے تبادلہ خیال کا آغاز کردیا ہے جہاں عام آدمی پارٹی کے ارکان تھے اور انہیں نا اہل قرار دیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT