Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / ’ہم بدلیں گے اور ہمارے شہر کو بدلیں گے‘ جی ایچ ایم سی کا نیا نعرہ

’ہم بدلیں گے اور ہمارے شہر کو بدلیں گے‘ جی ایچ ایم سی کا نیا نعرہ

چیف منسٹر کے سی آر کی منظوری، کمشنر بلدیہ جناردھن ریڈی کا بیان
حیدرآباد ۔ /10 ڈسمبر (سیاست نیوز) سوچھ نمسکار کے ذریعہ ملکی سطح پر شہرت حاصل کرنے والی جی ایچ ایم سی نے اب ایک نعرہ دیا ہے یعنی ’’ہم بدلیں گے اور ہمارے شہر کو بدلیں گے ‘‘ اور اس جدید نعرے کے تحت عوام میں شعور آگہی پروگرامس منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ کمشنر جناردھن ریڈی نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کے سی آر نے اس نعرے کے ساتھ عوام کے درمیان جانے کے احکامات دیئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تلنگانہ ملکی سطح پر ایسی اولین حکومت ہے جس نے سوکھے اور گیلے کچرے کی علحدہ حصولیابی کیلئے 44 لاکھ کچرے کے ڈبے تقسیم کئے ہیں ۔ اسکے باوجود عوام ان ڈبوں کو کچرے کے استعمال کے بجائے دیگر ضروریات کیلئے استعمال کرنے کا پتہ چلاہے ۔ علاوہ دو ہزار (2000) سوچھ آٹوز بھی بے روزگاروں کو تقسیم کئے گئے ہیں جن کے ذریعہ سوکھا اور گیلا کچرا علحدہ طور پر حاصل کرکے 75% کچرے کو ری سائیکلنگ کیا جارہا ہے اس طرح ماحولیاتی تحفظ حاصل کیا جاسکتا ہے اور اس بات کو شہریان میں اجاگر کرنے کے مقصد سے جدید نعرے کے ذریعہ شعور آگہی پروگرام منعقد کئے جائیں گے ۔ میئر بی رام موہن نے کہا کہ عوام اس نعرے پر مثبت اقدام اٹھارہے ہیں ۔ سوچھ پروگرامس کے انعقاد کیلئے سوچھ دوتھ پروگرام کے تحت 3 ہزار افراد کا تقرر کیا گیا ہے اور ایک سوچھ دوتھ کو 600 گھر مختص کئے جائیں گے اور وہ افراد گھر گھر جاکر خواتین سے ملاقات کرکے سوکھے اور گیلے کچرے کو علحدہ کرنے سے فواید بتاتے ہوئے کچرا اکھٹا کرنے والوں کو ہی کچرہ دینے اور سڑکوں پر کچرا نہ ڈالنے سے متعلق OPP کریں گے۔ آئندہ تین ماہ میں 22 لاکھ گھروں تک پہونچ کر سوچھ پروگرام سے آگاہ کرنے کا نشانہ مقرر کیا گیا ہے ۔ اور سوکھے و گیلے کچرے کی علحدگی سے ہونے والے فوائد پر مشتمل اسٹیگرس گھروں پر لگائے جائیں گے ۔ جی ایچ ایم سی نے مختلف نعرے جیسے سوچھ نمسکار ، آئی لو مائی جاب ، عزت سے بات کریں گے۔ سوچھ دوتھ ایپ ، سکٹو ایپ جیسے نعروں کی وجہ سے ملکی سطح پر شہرت حاصل کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT