Thursday , November 23 2017
Home / ہندوستان / ہم نے اقل ترین نقصان یقینی بنایا: حکومت تاملناڈو

ہم نے اقل ترین نقصان یقینی بنایا: حکومت تاملناڈو

چینائی /4 دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) سیلاب کی صورت حال میں راحت کاری اور بچاؤ کاموں میں مبینہ بے عملی کی وجہ سے تنقیدوں کی شکار حکومت تاملناڈو نے آج ادعا کیا کہ اس کی جانب سے غیر معمولی کوششیں ہوئی ہیں اور مختلف محکمہ جات نے بارشوں اور سیلاب کے نتیجے میں ہونے والے نقصان کو اقل ترین رکھنے میں کامیابی حاصل کی۔ سینئر کابینی وزیر اور حکومت کے اعلی عہدہ داروں نے ذرائع ابلاغ کو بچاؤ اور راحت کاری سرگرمیوں سے واقف کرایا، جن میں مرکزی اور ریاستی ایجنسیاں سرگرم ہیں۔ انھوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے بچاؤ اور راحت کاری میں کوئی کسر نہ رکھی جائے گی۔ باز آبادکاری کے افسر اعلی اتلیا مشرا نے یکم اکتوبر سے بارش سے متعلق مختلف واقعات میں فوت ہونے والوں کی تعداد 245 بتائی اور کہا کہ اس میں حیرت کی بات نہیں، کیونکہ بے تحاشہ بارشیں ہوئی ہیں۔ وزیر برقی این آر وشوناتھن نے کہا کہ اپوزیشن بالخصوص ڈی ایم کے کی طرف سے ہونے والی تنقیدیں سیاسی مقصد براری پر مبنی ہیں اور آئندہ سال کے اسمبلی انتخابات کو مدنظر رکھتے ہوئے کی جا رہی ہیں۔ وزیر امکنہ آر وائتھی لنگم نے کہا کہ راحت اور بچاؤ کی کوششیں جنگی خطوط پر جاری ہیں۔
چینائی سے زائد 600 افراد دہلی منتقل
دریں اثناء تاملناڈو کے اراکونم بحری اڈہ سے زائد از 600 افراد کو آج ڈیفنس اور این ڈی آر ایف کی مربوط ٹیم کی جانب سے بحفاظت نئی دہلی منتقل کیا گیا۔ ان میں زائد 130 یونیورسٹی اسٹوڈنٹس اور ایک معمر فرانسیسی جوڑا شامل ہے۔ یہ تمام لوگ چینائی میں بارش اور سیلاب جیسی صورت حال کے نتیجے میں پھنس گئے تھے۔ انھیں آج دو فلائٹس کے ذریعہ دہلی بھیجا گیا۔

TOPPOPULARRECENT