Wednesday , December 12 2018

ہندوتوالیڈر کو بچانے فڈنویس پر امبیڈکر کا الزام

نئی دہلی ۔ 22 جنوری ۔(سیاست ڈاٹ کام) بی آر امبیڈکر کے پوتے اور دلت لیڈر پرکاش امبیڈکر نے دائیں بازو کے ہندوتوا لیڈر سمبھاجی بھیڈے کی گرفتاری میں مہاراشٹرا پولیس کی ناکامی پر سوال اُٹھایا، جن کے خلاف بھیماکورے ۔ گاؤں تشدد کو مبینہ طورپر بھڑکانے کے الزام کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ پرکاش امبیڈکر نے یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ’’ہم سمبھاجی بھیڈے اور ملند اکبوٹے کی گرفتاری کا مطالبہ کررہے ہیں۔ جنھوں نے اس ماہ کے اوائیل میں بھیماکورے گاؤں پارک میں تشدد کے لئے اُکسایا تھا اور ان کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا گیا تھا ۔ انھوں نے ادعاء کیا کہ چیف منسٹر دیویندر فڈنویس نے تیقن دیا ہے کہ بھیڈے کو گرفتار کرلیا جائے ۔ سابق رکن پارلیمنٹ پرکاش امبیڈکر نے الزام عائد کیا کہ ’’لیکن اب ہم نے اقتدار کی راہداریوں میں سنا ہے کہ پی ایم او ( وزیراعظم کے دفتر ) نے ریاستی حکومت کو حکم دیا ہے کہ بھیڈی کو گرفتار نہ کیا جائے ۔ امبیڈکر نے بھیڈی سے متعلق ایک ویڈیو بھی جاری کیا جس میں آر ایس ایس کے سابق ورکر نے دعویٰ کیا کہ انھوں نے ہی وزیراعظم سے یوم آزادی کے موقع پر زعفرانی پگڑی پہننے کے لئے کہا تھا۔ لیکن اس ویڈیو کی صداقت کی کوئی توثیق نہیں ہوسکی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT