Wednesday , September 19 2018
Home / ہندوستان / ہندوتوا کی مخالفت ترقی کی مخالفت ‘ آدتیہ ناتھ

ہندوتوا کی مخالفت ترقی کی مخالفت ‘ آدتیہ ناتھ

لکھنو 14 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) چیف منسٹر اترپردیش یوگی آدتیہ ناتھ نے آج اپوزیشن جماعتوں پر تنقید کی اور کہا کہ وہ ہندوتوا کی مخالفت اس لئے کر رہی ہیں کیونکہ وہ ترقی اور ہندوستانیت کے خلاف ہیں۔ انہوں نے بلدی انتخابات کیلئے مہم کا آغاز کرنے ایودھیا روانگی سے قبل کہا کہ ہندوتوا کسی مذہب سے مربوط نہیں ہے ۔ یہ در اصل قوم پرستی سے تعلق رکھتا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ہندوتوا اور ترقی ایک دوسرے سے مربوط ہیں۔ جو لوگ ہندوتوا کی مخالفت کر رہے ہیں وہ در اصل ترقی اور ہندوستانیت کی مخالفت کر رہے ہیں۔ اپوزیشن کی جانب سے ان کی تقاریر کو ہندوتوا سے جوڑنے اور ترقی سے نہ جوڑنے پر آدتیہ ناتھ نے کہا کہ یہ مضحکہ خیز ہے کہ یہ طاقتیں موروثی سیاست اور ذات پات کی حوصلہ افزائی کرتی ہیں اور سکیولرازم کی دہائی دیتی ہیں ۔ یہ لوگ کرپشن میں خود ملوث ہیں اور اب ایسی باتیں کر رہے ہیں۔ سابق چیف منسٹر یو پی اکھیلیش یادو کی جانب سے ایٹاوہ میں لارڈ کرشنا کا مجسمہ نصب کرنے کے منصوبہ پر آدتیہ ناتھ نے کہا کہ اکھیلیش سنگھ دریودھن کا مجسمہ بھی نصب کرنا چاہتے ہیں ۔ اس سے پتہ چلتا ہے کہ وہ ریاست کو کہاں لیجانا چاہتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT