Wednesday , September 26 2018
Home / دنیا / ہندوستانی طالب علم کو دوست کے قتل پر سزائے عمرقید

ہندوستانی طالب علم کو دوست کے قتل پر سزائے عمرقید

نیویارک ۔ 18 مارچ۔(سیاست ڈاٹ کام) ایک 25 سالہ ہندوستانی طالب علم جو یہاں کی ایک باوقار یونیورسٹی میں زیرتعلیم تھا ، اُسے 2013 ء میں اپنے ایک دوست کے قتل کا مجرم قرار دیا گیا ہے جو اُس نے صرف اس بنیاد پر کیا تھا کہ اس کی گرل فرینڈ اُس کے دوست کے ساتھ محبت کی پینگیں بڑھاتے ہوئے اُس کے ساتھ دھوکہ کررہی ہے ۔ اگر جرم ثابت ہوگیا تو راہول گپتا نام

نیویارک ۔ 18 مارچ۔(سیاست ڈاٹ کام) ایک 25 سالہ ہندوستانی طالب علم جو یہاں کی ایک باوقار یونیورسٹی میں زیرتعلیم تھا ، اُسے 2013 ء میں اپنے ایک دوست کے قتل کا مجرم قرار دیا گیا ہے جو اُس نے صرف اس بنیاد پر کیا تھا کہ اس کی گرل فرینڈ اُس کے دوست کے ساتھ محبت کی پینگیں بڑھاتے ہوئے اُس کے ساتھ دھوکہ کررہی ہے ۔ اگر جرم ثابت ہوگیا تو راہول گپتا نامی طالب علم کو سزائے عمرقید ہوسکتی ہے۔ میری لینڈ کی ایک عدالت میں گیارہ دنوں تک مقدمہ چلنے کے بعد گپتا کو قصوروار ٹھہرایا گیا ۔ ابتدائی بیان میں اُس نے پولیس سے کہا تھا کہ اُس نے اپنے 23 سالہ دوست مارک وا کو اس بنیاد پر قتل کیا کیونکہ اُسے شبہ تھا کہ اُس کی (گپتا ) گرل فرینڈ اُسے دھوکہ دیتے ہوئے مارک کے ساتھ قربت بڑھارہی ہے ۔ جارج واشنگٹن یونیورسٹی میں گرائجویشن کے طالب علم گپتا نے بعد ازاں اس قتل کا الزام یہ کہکر اپنی گرل فرینڈ کے سرمنڈھنا چاہا کہ اُس نے اصلی قاتل یعنی اپنی گرل فرینڈ کو بچانے کے لئے پولیس سے جھوٹ کہا تھا ۔ فرد جرم کے مطابق گپتا ، اُس کی گرل فرینڈ ، مقتول مارک اور ایک دیگر دوست نے گپتا کے اپارٹمنٹ میں اُس کی سالگرہ منانے کیلئے خوب شراب نوشی کی تھی اور پارٹی کے بعد صبح کی اولین ساعتوں میں گرل فرینڈ ٹیلر گوڈ نے دیکھا کہ مارک خون میں لت پت پڑا ہے ۔ اس مقدمہ کا قطعی فیصلہ (ملزم کی سزا ) 16 اپریل کو سنایا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT