Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / ہندوستانی قائدین کی بیرون ممالک توہین قوم شرمسار ، کانگریس ایم ایل سی فاروق حسین کی وزیراعظم پر تنقید

ہندوستانی قائدین کی بیرون ممالک توہین قوم شرمسار ، کانگریس ایم ایل سی فاروق حسین کی وزیراعظم پر تنقید

حیدرآباد ۔ 19 ۔ اگست : ( سیاست نیوز) : کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل مسٹر محمد فاروق حسین نے وزیر اعظم نریندر مودی پر بیرون ممالک میں ہندوستان کے قائدین کی توہین کرتے ہوئے قوم کو شرمسار کرنے کا الزام عائد کیا ۔ مسٹر محمد فاروق حسین نے کہا کہ ملک کے پہلے وزیر اعظم جواہر لعل نہرو سے ڈاکٹر منموہن سنگھ تک تمام وزرائے اعظم نے دنیا کے تقریبا تمام ممالک کا دورہ کیا اور ان کے ساتھ خارجی تعلقات کے علاوہ تجارتی ، ثقافتی ، فروغ تعلیم ، سیکوریٹی وغیرہ پر سینکڑوں معاہدے کئے گئے ۔ دونوں ممالک کے درمیان صرف خارجی پالیسی کو زیادہ اہمیت دی ، ملک کی سیاست اور اپوزیشن قائدین اور جماعتوں کے خلاف کبھی کوئی بات نہیں کی اور نہ ہی ان کی شکایت کی ۔ نریندر مودی کو عوام نے ملک کا وزیر اعظم بنایا ہے تاہم وہ ٹورسٹ وزیر کی ذمہ داری نبھاتے ہوئے ہندوستان کے ریاستوں کے کم اور بیرونی ممالک کے زیادہ دورے کرتے ہوئے ہندوستانی خزانے کو نقصان پہونچا رہے ہیں ۔ وزیر اعظم کے ان دوروں سے ہندوستان کو ابھی تک کوئی فائدہ نہیں ہوا ، صرف معاہدے کاغذ کے حد تک محدود ہیں ۔ سستی شہرت حاصل کرنے کے لیے نریندر مودی زبردستی بیرونی ممالک کے دورے کررہے ہیں اور اپنے دوروں پر کروڑہا روپئے خرچ کرتے ہوئے این آر آئیز کے ساتھ بڑے بڑے جلسوں کا اہتمام کرتے ہوئے ملک کے مسائل اور قائدین پر تنقید کرتے ہوئے سستی شہرت حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں جس سے عالمی سطح پر قوم کا وقار مجروح ہورہا ہے ۔ وزیر اعظم کو زیب نہیں دیتا کہ وہ اس طرح کے ہندوستانیوں کے خلاف بیرونی ممالک میں ریمارکس کریں ۔ مسٹر محمد فاروق حسین نے کہا کہ نریندر مودی نے ہندوستان میں کبھی ٹوپی نہیں لگائی تاہم دبئی کے سربراہوں نے دبئی اسلامک مملکت ہونے کے باوجود سیکولرازم کا مظاہرہ کرتے ہوئے دبئی میں مندر کے لیے اراضی دینے سے اتفاق کیا ہے ۔ اس سے نریندر مودی کو سبق سیکھنا چاہئے کم از کم اب تو بھی وہ فرقہ پرستی کی عینک نکال دیں ملک کے دستور و سیکولرازم کا احترام کریں ۔ تعلیم کو زعفرانی رنگ دینے کی کوشش کرنے سے دستبردار ہوجائے ۔۔

TOPPOPULARRECENT