Wednesday , September 26 2018
Home / دنیا / ہندوستانی معیشت کی 6.4 فیصد شرح ترقی کا امکان

ہندوستانی معیشت کی 6.4 فیصد شرح ترقی کا امکان

اقوام متحدہ ۔ 14 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی معیشت امکان ہے کہ جاریہ سال 6.4 فیصد کی شرح سے ترقی کرے گی۔ اس کے نتیجہ میں جنوبی ایشیاء کی معیشت کو بھی ترقی کی تحریک ملے گی۔ اقوام متحدہ کی رپورٹ کے بموجب جس میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان کی معیشت کی کارکردگی امکان ہے کہ 2015 ء میں بہتر ہوجائے گی۔ طویل عرصہ سے معیشت کے ڈھانچہ میں اصلاح کی ضر

اقوام متحدہ ۔ 14 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی معیشت امکان ہے کہ جاریہ سال 6.4 فیصد کی شرح سے ترقی کرے گی۔ اس کے نتیجہ میں جنوبی ایشیاء کی معیشت کو بھی ترقی کی تحریک ملے گی۔ اقوام متحدہ کی رپورٹ کے بموجب جس میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان کی معیشت کی کارکردگی امکان ہے کہ 2015 ء میں بہتر ہوجائے گی۔ طویل عرصہ سے معیشت کے ڈھانچہ میں اصلاح کی ضرورت ہے جس پر عمل آوری میں ترقی ضروری ہے۔ جنوبی اور جنوب مغربی ایشیاء میں جاریہ سال معاشی ترقی 5.3 فیصد ہونے کا امکان ہے جو گزشتہ چار سال کی بلند ترین شرح ترقی ہوگی۔ اس موقف کا نظریہ خاص طور پر ہندوستان کی ترقی میں اضافے کی قیادت میں فروغ پاتا ہے ۔ اقوام متحدہ کے شعبہ معیشت اور سماجی کمیشن برائے ایشیاء و بحرالکاہل نے اپنے ایشیاء اور بحرالکاہل کے سروے برائے 2014 ء میں جو ختم سال تک تازہ ترین سروے ہے، کہا کہ ہندوستان کی معیشت میں امکان ہے کہ جاریہ سال 6.4 فیصد شرح ترقی حاصل ہوگی جبکہ گزشتہ سال یہ 5.5 فیصد تھی۔ مجوزہ اصلاحات کی حد تک مثبت توقعات کے بارے میں نریندر مودی حکومت کی جانب سے جو تجویزیں پیش کی گئیں اور ان پر عمل آوری کی گئی ہے،

اس سے صارفین اور تاجر برادری کا اعتماد 2014 ء کے نصف آخر میں زیادہ ہوگیا ہے اور اس کے نتیجہ میں معاشی ترقی ہوئی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایشیاء اور بحرالکاہل کے ترقی پذیر ممالک پیش قیاسی کے بموجب جاریہ سال 5.8 فیصد شرح ترقی حاصل کریں گے جو 2014 ء میں 5.6 فیصد تھی۔ افراطِ زر میں کمی آئے گی اور تیل کی قیمتوں میں تیز رفتار کمی ہوگی۔ نظام اصلاحات اور تیل کی کم قیمتیں پائیدار ترقی کیلئے تحریک دینے والی ثابت ہوں گی۔ ایشیائے کوچک علاقہ میں ترقی کی تحریک بہتر فروغ کا نتیجہ ہوگی۔ کئی ترقی پذیر معیشتیں اس سے اثر قبول کریں گی جن میں بنگلہ دیش ، ہندوستان ، انڈونیشیاء ، پاپوا نیوگنی ، کوریا اور تھائی لینڈ شامل ہیں۔ ہندوستان اور انڈونیشیاء جیسی معیشتیں توقع ہے کہ ڈھانچہ میں اصلاحات کریں گی، جس کی نئے انتظامیہ کے تحت سخت ضرورت ہے۔ امکان ہے کہ اس سے 2015 ء میں ان کی کارکردگی کے مظاہرہ میں بھی بہتری آئے گی ۔

TOPPOPULARRECENT