Monday , November 20 2017
Home / کھیل کی خبریں / ہندوستان آج زمبابوے کو ایک اور کراری شکست دینے کا خواہاں

ہندوستان آج زمبابوے کو ایک اور کراری شکست دینے کا خواہاں

تین میچس کی سیریز میں وائیٹ واش کی سمت پیشقدمی کی کوشش۔ نوجوان کھلاڑیوں کے عزائم اور حوصلے دونوں بلند

ہرارے 12 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل ہندوستانی کرکٹ ٹیم کل میزبان زمبابوے کے خلاف دوسرے ایک روزہ میچ میں ایک اور شاندار کامیابی کی کوشش کریگی ۔ دونوں ٹیموں کے مابین کل ہرارے میں دوسرا ونڈے میچ ہونے والا ہے اور ہندوستانی ٹیم سیریز میں وائیٹ واش کی سمت مزید پیشقدمی کی کوشش کریگی ۔ پہلے میچ میں شاندار کامیابی کے ذریعہ ٹیم کے حوصلے بلند ہیں۔ تین میچس کی سیریز کے پہلے ونڈے میں ہندوستان نے میزبان زمبابوے کو کھیل کے ہر شعبہ میں مات دیدی تھی ۔ دھونی کی قیادت میں نوجوان کھلاڑی کل بھی اچھا مظاہرہ کرنے اور کامیابی حاصل کرنے کی کوشش کرینگے ۔ بمرا نے جہاں چار وکٹس لیتے ہوئے میزبان ٹیم کو 168 پر آوٹ کرنے میں اہم رول ادا کیا تھا وہیں اوپنر لوکیش راہول نے کیرئیر کے پہلے ونڈے میں سنچری اسکور کرکے ٹیم کو یہ نشانہ عبور کرنے میں مدد کی ۔ راہول 100 رن بناکر ناٹ آوٹ رہے تھے ۔ امباٹی رائیڈو نے بھی کل کھیلے گئے میچ میں بہترین کارکردگی دکھائی تھی اور انہوں نے 120 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے 62 ناٹ آوٹ رنز پانچ چوکوں کی مدد سے بنائے تھے ۔ انہوں نے ایک جانب سے ذمہ دارانہ مظاہرہ کرتے ہوے راہول کو تیز رفتار اسکور کرنے میں مدد کی تھی ۔ کل کی اننگز سے رائیڈو کے حوصلے بھی بلند ہوگئے ہیں ۔ماضی میں ہندوستانی ٹیم زمبابوے کے خلاف دو سیریزوں میں وائیٹ واش کرچکی ہے ۔ ہندوستان نے 2013 میں زمبابوے کو اس کے ہی ملک میں 0 – 5 سے شکست دی تھی جبکہ 2015 میں اسے 0 – 3 سے شکست دیدی گئی تھی ۔ اب بھی ہندوستانی ٹیم چونکہ افتتاحی مقابلہ جیت چکی ہے اور کل دوسرا مقابلہ ہونے والا ہے اس میں بھی کامیابی حاصل کرکے ایک اور امکانی وائیٹ واش کی سمت پیشقدمی کرنا چاہتی ہے ۔ بیٹنگ کے شعبہ میں جہاں ہندوستانی ٹیم واضح طور پر مستحکم دکھائی دیتی ہے اور اس کا مظاہرہ بھی کیا گیا ہے ۔ بولنگ میں بھی نوجوان بولرس نے متاثر کن مظاہرہ کیا ہے ۔ جسپریت بمرا کے علاوہ دھول کلکرنی اور بریندر سرن نے بھی نپی تلی گیند بازی کی تھی ۔ یزویندر چہل اور اکشر پٹیل کی گیند بازی بھی متاثر کن رہی ۔ چونکہ کل کے میچ میں ہندوستان نے نو وکٹس سے کامیابی ملی تھی ایسے میں اس کے مڈل آرڈر کو ابھی بھی درمیان میں وقت گذارنے کا موقع نہیں ملا ہے اور مڈل آرڈر کے بلے باز اس موقع کے منتظر دکھائی دیتے ہیں تاکہ وہ اپنی صلاحیتوں کا بھی مظاہرہ کرسکیں۔ خاص طور پر منیش پانڈے اپنی باری کے منتظر ہوسکتے ہیں جنہوںن ے جاریہ سال جنوری میں آسٹریلیا کے خلاف اپنے کیرئیر کی پہلی سنچری اسکور کی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT