Monday , January 22 2018
Home / Top Stories / ہندوستان بدل گیا ہے ‘ قدیم نظریات ترک کئے جائیں : مودی

ہندوستان بدل گیا ہے ‘ قدیم نظریات ترک کئے جائیں : مودی

ہنوور 13 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) جرمن سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کی کوشش کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے آج وعدہ کیا کہ ہندوستان کو عالمی سطح پر مینوفیکچرنگ کا مرکز بنانے کیلئے قوانین اور قواعد میں جہاں کہیں ضرورت ہوگی اصلاحات لائی جائیں گی ۔ انہوں نے یہ ادعا کیا کہ ہندوستان اب ایک بدلا ہوا ملک ہے ۔ انہوں نے جرمنی کے بڑے تاجروں اور ا

ہنوور 13 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) جرمن سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کی کوشش کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے آج وعدہ کیا کہ ہندوستان کو عالمی سطح پر مینوفیکچرنگ کا مرکز بنانے کیلئے قوانین اور قواعد میں جہاں کہیں ضرورت ہوگی اصلاحات لائی جائیں گی ۔ انہوں نے یہ ادعا کیا کہ ہندوستان اب ایک بدلا ہوا ملک ہے ۔ انہوں نے جرمنی کے بڑے تاجروں اور اعلی صنعت کاروں سے کہا کہ وہ ہندوستان کے تعلق سے اپنی قدیم رائے پر اکتفا نہ کریں بلکہ ہندوستان کو آئیں اور محسوس کریں کہ قوانین کے اعتبار سے ہندوستان میں زبردست تبدیلیاں آئی ہیں ۔مودی نے غیر ملکی سرمایہ کاروں کو ترغیب دے کر انہیں اقدام (میک ان انڈیا ) کو کامیاب بنانے کی کوشش کردی ہے ۔ وہ ہند ۔ جرمنی تجارتی چوٹی کانفرنس کا ہانوور تجارتی میلہ میں افتتاح کررہے تھے ‘ جہاں انہوں نے چانسلر انجیلا مرکل کے ساتھ ہندوستانی پویلین کا افتتاح کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان اب بدل چکا ہے ۔ ہمارے قوانین اب مزید شفاف ‘ متحرک اور مستحکم ہوچکے ہیں۔ ہم ان مسائل پر ایک دیرپا اور مستقبل پر مبنی خیال رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ آخر میں تاجروں اور صنعتکاروں سے یہی کہیں گے کہ وہ ہندوستان کے تعلق سے قدیم نظریات اور خیالات کو برقرار نہ رکھیں۔ بلکہ وہ ہندوستان آئیں اور یہاں قوانین کے اعتبار سے بدلے ہوئے ماحول کا جائزہ لیں۔ سابقہ تاثرات کو ترک کردیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی میک ان انڈیا مہم ایک ضرورت ہے ۔ انہیں یقین ہے کہ میک ان انڈیا کو عالمی مینوفیکچرنگ مرکز بنانے ہمارا سفر نہیں رک سکتا اور اس میں خود ہمارے اپنے قوانین اور قواعد کوئی رکاوٹ نہیں بن سکتے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں جہاں کہیں ضرورت ہوگی قواعد و قوانین میں اصلاحات اور بہتری لانے کی ضرورت ہوگی اور ہم ایسا کرینگے ۔ اس موقع پر وہاں موجود سامین اور صنعت کاروں نے ان کے اس اعلان کا خیر مقدم کیا ۔ ان میں دونوں ملکوں کے اعلی کاروباری نمائندے شامل تھے ۔ انہوں نے تاجروں سے کہا کہ وہ پھر ایک بار انہیں ہندوستان مدعو کرتے ہیں۔ وہ یہ تیقن دیتے ہیں کہ وہ ان تاجروںکی کامیابی کو یقینی بنانے شخصی طور پر توجہ دینگے اگر وہ ہندوستان میں کاروبار کرتے ہیں۔ دریں اثنا نریندر مودی آج رات ہنوور سے اپنے اولین دورہ جرمنی کے دوسرے مرحلہ میں برلن پہونچ گئے اور وہ چانسلر انجیلا مرکیل کے ساتھ کل وسیع تر امور پر تبادلہ خیال کرینگے ۔ ہندوستان کے ترقیاتی ایجنڈہ کو آگے بڑھانے پر بات چیت میں توجہ دی جائیگی ۔ وزیر اعظم نے ہنوور میلہ کا افتتاح کرنے کے بعد برلن کا سفر کیا تھا ۔ یہاں آمد کے فوری بعد انہوں نے سیمنس ٹکنیکل اکیڈیمی کا دورہ کیا ۔ نریندر مودی اور انجیلا مرکیل کل تفصیلی بات چیت کرینگے جس میں امکان ہے کہ اس بات کا جائزہ لیا جائیگا کہ جرمنی ہندوستان کی ترقی کے ایجنڈہ میں اس کی کیا مدد کرسکتا ہے ۔ نریندر مودی نے اپنی آمد کے موقع پر ایک جرمن اخبار میں اپنی تحریر میں کہا ہے کہ عالمی سطح پر اشتراک کی ہندوستان کی کوششوں میں جرمنی کو خاص مقام حاصل ہے ۔ ہندوستان چاہتا ہے کہ وہ جرمنی کیلئے کاروباری موقع پیش کرے ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ ہندوستان اور جرمنی کی مشترکہ اقدار پر مبنی حکمت عملی شراکت ہے ۔ انجیلا مرکیل کے ساتھ اپنی بات چیت میں نریندر مودی میک ان انڈیا مہم کیلئے جرمنی کی تائید حاصل کرنے کی کوشش کرینگے ۔ انجیلا مرکیل نریندر مودی کے اعزاز میں ظہرانہ کا اہتمام کرینگی جو سہ رومی دورہ پر گئے ہوئے ہیں۔ انہوں نے قبل ازیں فرانس کا دورہ کیا تھا اور جرمنی کے بعد کناڈا جائیں گے ۔ یوروپین یونین میں جرمنی ‘ ہندوستان کا بڑا تجارتی شراکت دار ملک ہے ۔

TOPPOPULARRECENT