Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / ہندوستان سیکولر ملک، تمام مذاہب و طبقات میں اتحاد سے ترقی ممکن

ہندوستان سیکولر ملک، تمام مذاہب و طبقات میں اتحاد سے ترقی ممکن

آل انڈیا میناریٹی فورم و انڈیا عرب فاؤنڈیشن کی یوم آزادی تقریب، کانگریس، ٹی آر ایس و تلگودیشم قائدین کی شرکت
حیدرآباد 16 اگسٹ (سیاست نیوز) یوم آزادی تمام ہندوستانیوں کی مشترکہ عید ہے۔ سماج کے تمام مذاہب، طبقات سے بالاتر ہوکر اس کا جشن مناتے ہیں۔ ہندوستان تمام مذاہب پر مشتمل گلدستہ ہے۔ آل انڈیا میناریٹی فورم اور انڈیا عرب فرینڈشپ فاؤنڈیشن کی جانب سے ہوٹل گولکنڈہ میں اہتمام کردہ یوم آزادی جشن تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مختلف سیاسی جماعتوں کے قائدین نے عوام کو یہ پیغام دیا ہے۔ اس تقریب کی قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر نے صدارت کی جبکہ مہمان خصوصی کی حیثیت سے ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر محمد محمود علی، وزیرداخلہ مسٹر این نرسمہا ریڈی، قائد اپوزیشن مسٹر کے جانا ریڈی، صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی، سابق صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر پنالہ لکشمیا ، سابق وزراء مسٹر ڈی ناگیندر، مسز گیتا ریڈی، سابق ارکان پارلیمنٹ مسٹر پونم پربھاکر، مسٹر جی ویویک، صدرنشین اقلیتی کمیشن مسٹر عابد رسول خان، ارکان قانون ساز کونسل مسٹر محمد فاروق حسین، مسٹر ایم ایس پربھاکر، مسٹر رنگا ریڈی، مسٹر جگدیشور ریڈی، کانگریس کے قائدین مسرز خلیل الرحمن، کے ایس کے افضل الدین، راجکمار، ایس محمد واجد حسین، سابق وائس چانسلر پروفیسر اکبر علی خان، فیروز خان (تلگودیشم) ، متین مجددی، اسپیشل چیف سکریٹری محکمہ مال مسٹر اجئے مشرا، پرنسپل سکریٹری محکمہ آبپاشی مسٹر شیلندر کمار جوشی، پرنسپل سکریٹری پنچایت راج مسٹر ریمنڈ پیٹر، سکریٹری اسپورٹس مسٹر پی وینکٹیشم، مسٹر اے کے خان اے سی بی سربراہ، مسٹر ٹی پی داس ڈی جی پی ویجلنس اینڈ انفورسمنٹ، مسٹر وی کے ساگھ ڈی جی پی جیل، مسٹر پی کرشنا پرساد اسپیشل ڈی جی پی روڈاینڈ سیفٹی، ڈاکٹر اروی نائیک، ڈی آئی جی مسز کلپنا نائک، مسٹر قدرت نواز، مسٹر شمیم سابق کمشنر ٹورنٹو، محمد جمال خان، سید نور کینیڈا کے علاوہ دوسرے موجود تھے۔ ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر محمد محمود علی نے جشن آزادی کا اہتمام کرنے پر مسٹر محمد علی شبیر اور مسٹر جابر پٹیل سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہاکہ ہندوستان کو 1947 ء میں آزادی ملی تاہم تلنگانہ کو 2014 ء میں آزادی ملی۔ تلنگانہ ریاست گنگا جمنی تہذیب کی علمبردار ہے۔ جہاں مذاہب اور سماج کے تمام طبقات مل جل کر رہتے ہیں۔ انھوں نے تمام قائدین کو جماعتی وابستگی سے بالاتر ہوکر تلنگانہ کی ترقی میں حکومت سے تعاون کرنے کا مشورہ دیا۔ ریاستی وزیرداخلہ مسٹر این نرسمہا ریڈی نے کہاکہ ہندو مسلم اتحاد سے ترقی اور فلاح و بہبود ممکن ہے۔ فرقہ پرست طاقتیں اپنی ذاتی اور سیاسی مفادات کے لئے ہندو مسلم اتحاد کو نقصان پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ان کے ناپاک عزائم کا خاتمہ کرنا سماج کے تمام شہریوں کی ذمہ داری ہے۔ قائد اپوزیشن مسٹر کے جاناریڈی نے کہاکہ ہندوستان ایک سیکولر ملک اور تمام مذاہب و طبقات میں اتحاد سے ہی ملک اور ریاست ترقی کرے گا۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر نے کہاکہ ہندوستان ہمارا ملک ہے اور اس پر ہم سب کو فخر ہے۔ ہندوستان کی آبادی 130 کروڑ ہے ملک میں 127 زبانیں بولی جاتی ہیں۔ ہندوستان کے دستور نے سینکڑوں مذاہب اور طبقات کے عوام کو مل جل کر رہنے کا انمول موقع فراہم کیا ہے۔ انھوں نے کہاکہ ریاست تلنگانہ کی ترقی کے لئے تمام قائدین کو اپنی اپنی ذمہ داری بخوبی نبھانے کی ضرورت ہے۔ سابق ریاستی وزیر ڈاکٹر جے گیتا ریڈی نے جشن یوم آزادی تقریب کے اہتمام پر مسٹر محمد علی شبیر اور جابر پٹیل کو مبارکباد دیتے ہوئے ہر سال اس طرح کی تقاریب کا اہتمام کرنے پر زور دیتے ہوئے کہاکہ مذہب نہیں سکھاتا آپس میں بیر رکھنا۔ کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل مسٹر محمد فاروق حسین نے کہاکہ یوں تو ہندو مسلم عیسائی اور سکھوں کی علیحدہ علیحدہ عیدیں و تہوار ہیں مگر یوم آزادی تمام ہندوستانیوں کی عید ہے۔ جس کو تمام مذاہب اور طبقات کے عوام ایک ساتھ مناتے ہیں اور ایسے موقعوں پر تقاریب کا اہتمام کرنا جمہوریت کو مستحکم کرنے اور سیکولرازم کو فروغ دینے میں معاون و مددگار ثابت ہوگا۔ صدر آل انڈیا میناریٹی فورم اور انڈیا عرب فرینڈشپ فاؤنڈیشن مسٹر جابر پٹیل نے فورم اور فاؤنڈیشن کی کارکردگی پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ یہ ایک ایسا پلیٹ فارم ہے جہاں جماعتی وابستگی سے بالاتر ہوکر سیاسی قائدین جمع ہوتے ہیں اور مختلف مسائل پر گفتگو ہوتی ہے جس کے لئے وہ اظہار تشکر کرتے ہیں۔ ممتاز پٹیل، دلاور پٹیل، عتیق صدیقی اور ابو پٹیل نے مہمانوں کا استقبال کیا۔

TOPPOPULARRECENT