Tuesday , November 21 2017
Home / پاکستان / ہندوستان سے سب سے بڑا خارجی خطرہ لاحق : پاکستانی افواج

ہندوستان سے سب سے بڑا خارجی خطرہ لاحق : پاکستانی افواج

سینیٹ دفاعی کمیٹی کا راولپنڈی میں جوائنٹ چیفس آفس اسٹاف کمیٹی کے صدرنشین سے ملاقات

اسلام آباد ۔ 28 اگست (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی افواج نے پارلیمانی کمیٹی کو بتایا کہ ہندوستان ہی وہ واحد ملک ہے، جس سے پاکستان کو خارجی طور پر خطرہ لاحق ہے اور اب جبکہ دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات منسوخ ہوچکی ہیں، ان حالات میں خارجی طور پر خطرہ مزید بڑھ گیا ہے۔ سینیٹ کی دفاعی کمیٹی جس کی قیادت سینیٹر شاہد حسین سید کرتے ہیں، نے راولپنڈی میں فوج کے جوائنٹ اسٹاف ہیڈکوارٹرس کا دورہ کیا تھا، جہاں انہوں نے جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کے صدرنشین راشد محمود اور ان کی ٹیم سے تبادلہ خیال کیا۔ انہیں بتایا گیا کہ ہندوستان سے عرصۂ دراز (کم از کم گذشتہ تین چار سال) سے 100 بلین ڈالرس کے ہتھیار خرید چکا ہے جن میں سے 80 فیصد ہتھیار ایسے ہیں جو پاکستان کے خلاف استعمال کئے جاسکتے ہیں لہٰذا ہندوستانی افواج نے ’’شاپنگ‘‘ کا جو سلسلہ برقرار رکھا ہے،

جس کا سلسلہ آئندہ پانچ سال تک اگر جاری رہا تو مزید 100 بلین ڈالرس کے ہتھیار خریدے جائیں گے۔ گذشتہ 10 سالوں کے دوران ہندوستان نے اپنے دفاعی بجٹ میں دوگنا اضافہ کیا ہے۔ ہندوستان ہتھیاروں کی خریداری کا دنیا کا دوسرا سب سے بڑا ملک ہے۔ اخبار ڈان کی اطلاع کے مطابق ہندوستان کا دفاعی بجٹ جاریہ سال 40.07 بلین ڈالرس ہے۔ سینیٹ کمیٹی کو یہ بھی بتایا گیا کہ موجودہ صورتحال کا اگر جائزہ لیا جائے تو پاکستان کو بھی اپنے ردعمل میکانزم میں اضافہ کرنا چاہئے۔ دونوں ممالک کے درمیان چونکہ کسی قرارداد پر کوئی مفاہمت نہیں ہوئی ہے اور دوسرے یہ کہ دونوں ممالک کے درمیان بات چیت منسوخ ہوچکی ہے لہٰذا حالات اب پہلے سے بھی زیادہ نازک ہیں اور ’’کسی بھی وقت کچھ بھی ہوسکتا ہے‘‘ جیسا معاملہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT