Thursday , August 16 2018
Home / Top Stories / ’’ہندوستان میں اسلامی بینکنگ پر پیشرفت نہیں ہوگی ‘‘

’’ہندوستان میں اسلامی بینکنگ پر پیشرفت نہیں ہوگی ‘‘

شہریوں کو دستیاب وسیع تر مساویانہ موقعوں تک رسائی کی بنیاد پر آر بی آئی کا فیصلہ
نئی دہلی ۔ /12 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) آر بی آئی نے ایک بڑا قدم اٹھاتے ہوئے ملک میں اسلامی بینکنگ نظام متعارف کرنے کی تجویز پر پیشرفت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ بینک نے آر ٹی آئی کے تحت ایک سوال پر جواب دیا کہ بینکنگ اور مالیاتی خدمات تک تمام شہریوں کو دستیاب وسیع تر اور مساویانہ موقعوں پر غور و خوص کے بعد یہ فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اسلامی یا شرعی بینکنگ ایک ایسا مالیاتی نظام ہے جو شرح سود عائد نہ کرنے کے اصولوں پر مبنی ہے کیونکہ اسلام کے تحت سود کا لینا اور دینا حرام ہے ۔ جواب میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان میں اسلامی بینکنگ متعارف کرنے کا مسئلہ آر بی آئی اور حکومت ہند کے زیرغور تھا ۔ پی ٹی آئی کے ایک نامہ نگار اشوینی سریواستوا نے آر ٹی آئی کے تحت یہ سوال کیا تھا ۔ جس کے جواب میں بینک نے کہا کہ ’تمام شہریوں کو بینکنگ اور مالیاتی خدمات تک رسائی کے دستیاب وسیع تر اور مساویانہ موقعوں کو ملحوظ رکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا گیا کہ اس تجویز پر مزید پیشرفت نہ کی جائے ‘ آر بی آئی سے ہندوستان میں سود سے پاک ، یا اسلامی بینکنگ کیلئے اقدامات کی تفصیلات فراہم کرنے کی خواہش کی گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT