Monday , July 23 2018
Home / Top Stories / ہندوستان میں رہنے والا ہر شخص ہندو :موہن بھاگوت

ہندوستان میں رہنے والا ہر شخص ہندو :موہن بھاگوت

ہندوتوا کا مطلب تمام طبقات کا اتحاد ، ہماری کسی سے دشمنی نہیں ، آر ایس ایس سربراہ کا بیان
اگرتلہ ۔ /17 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام ) آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت نے آج کہا کہ ہندوستان میں رہنے والا ہر شخص ہندو ہے ۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ ہندوتوا کا مطلب تمام طبقات کا اتحاد ہے ۔ ہندوتوا ، ہندوازم سے مختلف ہے ۔ انہوں نے تریپورہ کے دارالحکومت میں سوامی وویکانند میدان پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوازم اور ہندوتوا میں فرق ہے ۔ ہندوستان میں رہنے والے مسلمان بھی ہندو ہے ۔ راشٹرا سیوم سیوک سنگھ کے سرسنگھ چالک نے مزید کہا کہ ہندوستان میں ہندوتوا کو ہندوازم سے تعبیر نہیں کیا جانا چاہئیے ۔ بھاگوت جمعہ سے تریپورہ کا 5 روزہ دورہ کررہے ہیں جہاں وہ شمال مشرقی خطہ میں آر ایس ایس کے تنظیمی کاموں کا بھی جائزہ لے رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری کسی سے کوئی دشمنی نہیں ہے ۔ ہم تمام کے حق میں ہیں اور تمام کی بہبود و خوشحالی چاہتے ہیں ۔ تمام کا اتحاد ہی کا مطلب ہندوتوا ہے ۔ ہندوستان ہندوؤں کی سرزمین ہے ۔ ساری دنیا میں ہندوؤں کو اذیت دی جارہی ہے ۔ دنیابھر میں اذیت کا شکار ہندو ہمارے ملک میں آکر سہارا لے رہے ہیں ۔ آر ایس ایس سربراہ نے مزید کہا کہ ہندوؤں کو سچائی پر یقین ہے لیکن یہ دنیا طاقتور کی پوجا کرتی ہے ۔ تنظیم میں ہی طاقت ہے ۔ تنظیم ہی فطری قانون پیش کرتی ہے ۔ تقسیم ہند کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 1947 ء میں ہندوستان کے کئی حصے بخرے ہوئے ہیں ۔ اس کی وجہ سے ہندوتوا کا جذبہ کمزور پڑگیا ۔ اور ہندو سماج انحطاط کا شکار ہوتا چلاگیا ۔ ہندوستان برسوں سے متحد رہا ہے اور ہندوؤں میں بھی اتحاد پایا جاتا ہے ۔ ملک کی قیمتی میراث کو روشناس کراتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مضطرب اور الجھن کا شکار یہ دنیا ایک نئی دنیا کیلئے ہندوستان کی طرف دیکھ رہی ہے تاکہ وہ اس ملک میں سہارا حاصل کرسکیں ۔ انہوں نے ہندوؤں پر زور دیا کہ وہ منظم ہوجائیں اور آر ایس ایس کے شاکھاؤں میں تربیت حاصل کریں ۔ یہ شاکھائیں ہی ایسے مقام ہیں جہاں کوئی بھی قومی تعمیر کیلئے تیار ہوسکتا ہے اور خود کی بہبود کیلئے کام کرسکتا ہے ۔ سناتھن دھرم کا مطلب ہی مل جلرک کام کرنا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT