Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / ہندوستان میں فرقہ پرستی کی کوئی گنجائش نہیں : ایم ششی دھر ریڈی

ہندوستان میں فرقہ پرستی کی کوئی گنجائش نہیں : ایم ششی دھر ریڈی

بہار میں عظیم اتحاد کی کامیابی پر جشن ، کانگریس کے سینئیر قائد کا گاندھی بھون میں خطاب
حیدرآباد ۔ 9 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے سینئیر قائد سابق رکن اسمبلی مسٹر ایم ششی دھر ریڈی نے کہا کہ فرقہ پرستی کی سیکولر ہندوستان میں کوئی جگہ نہیں ہے ۔ بہار کے عوام نے بی جے پی کو شکست دیتے ہوئے یہ ثبوت دے دیا ہے ۔ گاندھی بھون میں عظیم اتحاد کی کامیابی پر جشن منایا گیا ۔ مسٹر ایم ششی دھر ریڈی کی قیادت میں آج گاندھی بھون میں عظیم اتحاد بالخصوص کانگریس کے حوصلہ افزاء مظاہرے پر زبردست جشن منایا گیا ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مسٹر ایم ششی دھر ریڈی نے کہا کہ ہندوستان ایک سیکولر ملک ہے ۔ فرقہ پرستی اور نفرت پھیلاتے ہوئے سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کرنے والوں کو بہار کے عوام نے سبق سکھایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں عدم روا داری اور نفرت پھیلانے کی خاموش رہ کر حوصلہ افزائی کرنے والے وزیر اعظم نریندر مودی کی یہ سب سے بڑی شکست ہے ۔ بہار سے بی جے پی کے زوال کا آغاز ہوگیا ہے ۔ ورنگل کے ضمنی انتخاب میں بھی عوام فرقہ پرست بی جے پی اور جھوٹے وعدے کرتے ہوئے عوام کو دھوکہ دینے والی ٹی آر ایس کو بھی سبق سکھائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ بہار میں کانگریس نے 41 اسمبلی حلقوں پر مقابلہ کیا جن میں 27 حلقوں پر کامیابی حاصل کی ہے ۔ بہار کے عوام نے کانگریس پر مکمل اعتماد و بھروسہ کا اظہار کیا ہے ۔ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کے ترجمان اعلی مسٹر شرون کمار نے کہا کہ بہار کے نتائج ورنگل میں بھی اثر انداز ہوں گے ۔ بی جے پی جتنی جلدی عروج پر پہونچی تھی اتنی جلدی زوال پذیر ہورہی ہے ۔ جمہوریت میں اظہار خیال کی آزادی ہے مگر کسی بھی مذہبی معاملت میں مداخلت کرنے اور کسی بھی چیز کو متنازعہ بنا کر کسی کو بھی قتل کرنے کی کوئی اجازت نہیں ہے ۔ بہار کے نتائج یہ ثابت کرتے ہیں وزیر اعظم نریندر مودی عوامی اعتماد سے محروم ہورہے ہیں اور کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی سارے ملک میں امید کی کرن بن کر ابھر رہے ہیں ۔ وزیر اعظم نریندر مودی اور چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے ایک بھی وعدے کو پورا نہیں کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT