Monday , November 20 2017
Home / ہندوستان / ہندوستان میں ہر 4 منٹ میں ایک شخص سڑک حادثہ میں ہلاک

ہندوستان میں ہر 4 منٹ میں ایک شخص سڑک حادثہ میں ہلاک

مروجہ قوانین پر سختی سے عمل آوری کی ضرورت ہے۔ ماہرین کی رائے
نئی دہلی 10 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان میں ہر 4 منٹ میں ایک شخص سڑک حادثہ میں ہلاک ہوجاتا ہے۔ یہ اعداد و شمار محفوظ سڑکوں پر کام کرنے والی ایک غیر سرکاری تنظیم نے پیش کئے ہیں۔ سڑک حادثات میں نقصانات کا تخمینہ 3.8 لاکھ کروڑ یا مجموعی گھریلو پیداوار کا 3 فیصد لگایا گیا ہے۔ این جی او انڈینس فار روڈ سیفٹی نے یہ اندیشہ ظاہر کیاکہ سال 2020 ء تک مہلوکین کی تعداد ہر 3 منٹ میں ایک شخص تک پہنچ جائے گی۔ قومی دارالحکومت میں ایک سمینار بعنوان ’’ہندوستانی سڑکوں پر غیر محفوظ گاڑیوں کے چیالنجس کا مقابلہ‘‘ میں تشویشناک اعداد و شمار کا انکشاف کیا گیا۔ مسٹر کرن کے کپیلا صدرنشین انٹرنیشنل روڈ فیڈریشن (انڈیا چیاپٹر) نے کہاکہ روڈ سیفٹی کی منصوبہ بندی اور عمل آوری میں محفوظ گاڑیاں بنیادی ستون ہوتی ہیں لیکن ہم بعض بین الاقوامی برانڈس سے متاثر ہوکر سیفٹی کے معیارات پر سمجھوتہ کرلیتے ہیں جبکہ مسافرین کی سلامتی کے لئے شان و شوکت کے مظاہرے کے رجحان پر قابو پانے کی ضرورت ہے۔ انھوں نے بتایا کہ عالمگیر سطح پر ہندوستان میں سب سے زیادہ سڑکیں (روڈ نیٹ ورک) پائی جاتی ہیں۔ لیکن یہ المیہ ہے کہ گزشتہ ایک عشرہ میں ایک ملین ہندوستانی سڑک حادثات میں ہلاک ہوگئے۔ مذکورہ سمینار میں ماہرین نے روڈ سیفٹی اسٹانڈرس سے متعلق مسائل پر اظہار خیال کیا۔ ایک اور این جی او سیو لائف فاؤنڈیشن کے پیش کردہ اعداد و شمار میں بتایا گیا کہ گزشتہ سال اترپردیش میں سب سے زیادہ سڑک حادثات ہوئے ہیں اس کے بعد ٹاملناڈو میں 15,176 اور دہلی میں 1,671 اموات ہوئی ہیں۔ سال 2013 ء میں پیش آئے 4,43,000 سڑک حادثات میں 1,47,423 افراد ہلاک ہوئے ہیں جس میں نصف تعداد موٹر سیکل رانوں، پیدل راہگیروں اور سیکل رانوں کی ہے۔ جسٹس جی بی پٹنائک سابق چیف جسٹس آف انڈیا نے یہ نشاندہی کی کہ نئے قوانین کا اصرار کرنے کے بجائے مروجہ قواعد (رولز) پر سختی سے عمل آوری کی ضرورت ہے۔ مسٹر ایم این کرشنا منی سابق صدر سپریم کورٹ بار اسوسی ایشن نے کہاکہ روڈ سیفٹی قوانین سے لاعلمی افسوسناک ہے۔ اگرچیکہ بعض ریاستوں میں ہیلمٹ کا لزوم عائد کردیا گیا لیکن بیشتر ریاستیں پہلوتہی اختیار کئے ہوئے ہیں۔ انھوں نے بتایا کہ کوئی بھی کار اس کے معیار پر نہیں قیمت پر خریدی جاتی ہے جس کے نتیجہ میں حادثات سے دوچار ہونا پڑتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT