Thursday , September 20 2018
Home / دنیا / ہندوستان میں 14.3 ملین بندھوا مزدور

ہندوستان میں 14.3 ملین بندھوا مزدور

ساری دنیا میں سر فہرست ‘ نئے ریسرچ میں انکشاف

ساری دنیا میں سر فہرست ‘ نئے ریسرچ میں انکشاف
ملبورن 17 نومبر (سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان میں عصر حاضر کی غلامی ( بندھوا مزدوری ) میں بچوں کے بشمول جملہ 14.3 ملین افراد پھنسے ہوئے ہیں ۔ ساری دنیا کے اعداد و شمار میں ہندوستان سر فہرست ہے ۔ دنیا بھر میں 35.8 ملین افراد اس لعنت کا شکار ہیں۔ عالمی غلامی انڈیکس 2014 کو والک فری فاونڈیشن پرتھ آسٹریلیا نے شائع کیا ہے جس میں کہا گیا ہے ک ہندوستان اور پاکستان میں ساری دنیا کے بندھوا مزدوروں کی 45 فیصد تعداد رہتی ہے ۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اندازوں کے مطابق ایشیا میں 23.5 ملین افراد عصر حاضر کی غلامی میں پھنسے ہوئے ہیں۔ یہ غلامی کا شکار عالمی تعداد کے دو تہائی کے برابر ہے ۔ ریسرچ میں کہا گیا ہے کہ اس تعداد میں جملہ 14.2 ملین افراد ہندوستان میں رہتے ہیں جبکہ پاکستان میں 2.05 ملین افراد اس لعنت میں پھنسے ہوئے ہیں۔ صرف ان دو ممالک میں جملہ بندھوا مزدوروں کی تعداد 45 فیصد تک پہونچ جاتی ہے ۔ جنوبی ایشیا میں نیپال ‘ بنگلہ دیش ‘ افغانستان اور سری لنکا میں بھی لاکھوں افراد اس لعنت کا شکار ہوئے ہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ان افراد کو انسانی اسمگلنگ ‘ جبری مزدوری ‘ قرض کی غلامی ‘ جبری شادی یا جسم فروشی جیسے کاموں پر مجبور کیا جاتا ہے ۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ حقیقی اعداد و شمار کے مطابق ہندوستان اس فہرست میں سب سے اوپر ہے جہاں 14.29 ملین افراد اس لعنت کا شکار ہیں۔ اس کے بعد چین کا نمبر ہے جہاں یہ تعداد 3.24 ملین ہے اور تیسرے نمبر پر پاکستان ہے جہاں 2.05 ملین افراد بندھوا مزدور ہیں۔

TOPPOPULARRECENT