Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ہندوستان میں 18 سال سے کم عمر نوجوانوں کی حالت انتہائی ابتر

ہندوستان میں 18 سال سے کم عمر نوجوانوں کی حالت انتہائی ابتر

غربت کا شکار ، بہتر تعلیم دستیاب نہیں ، معیاری غذا سے بھی محرومی
حیدرآباد۔6جون (سیاست نیوز) ہندستان کی 50فیصد 18سال سے کم عمر کی آبادی شدید غربت میں مبتلاء زندگی گذارنے پر مجبور ہیں ۔آکسفورڈ یونیورسٹی کی جانب سے منظر عام پر لائی گئی ایک مطالعاتی رپور ٹ میں اس بات کا انکشاف کیا گیا ہے کہ ہندستان میں 18سال سے کم عمر نوجوانوں کی حالت انتہائی ابتر ہے اور وہ غربت کے عالم میں زندگی گذاررہے ہیں جنہیں نہ صرف بہتر تعلیم دستیاب نہیں ہے بلکہ انہیں معیاری غذاء بھی حاصل نہیں ہے۔ آکسفورڈ یونیورسٹی کی جانب سے کئے جانے والے اس مطالعہ میں 103 ایسے ممالک کے بچوں کو شامل رکھا گیا تھا جو متوسط آمدنی کے گروپ سے تعلق رکھنے والے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق ہندستان میں 34فیصد ایسی آبادی ہے جو 18سال سے کم عمر ہے لیکن ان میں 48فیصد سے زیادہ ایسے ہیں جو غربت کی سطح سے نیچے زندگی گذار رہے ہیں ۔ ان نوجوانو ںکو نہ تعلیم کی بہتر سہولتیں دستیاب ہیں اور نہ ہی معیاری غذا حاصل ہے۔ یونیورسٹی کی جانب سے انجام دیئے گئے اس تحقیقاتی مطالعہ کے دوران جو انکشاف ہوئے ہیں ان میں یہ بات منظر عام پر آئی ہے کہ ہندستان میں 50فیصد نوجوان نسل کو بہتر صحت کی سہولتیں بھی دستیاب نہیں ہیں۔آکسفورڈ یونیورسٹی کے کثیرالابعاد سروے کے دوران کئے گئے انکشاف میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ دنیا کے 36ایسے ممالک ہیں جہاں 18سال سے کم عمر طبقہ انتہائی شدید غربت کی صورتحال کا سامنا کر رہا ہے۔ مسز سبینا الکائیر ڈائریکٹر آکسفورڈ پاؤرٹی اینڈ ہیومن ڈیولپمنٹ انیشیٹیو کے زیر اہتمام کیئے گئے اس سروے کے دوران دنیا کے 103ممالک میں 1.8بلین نوجوانوں کا جائزہ لیا گیا اور اس تجزیہ کے بعد جو نتیجہ اخذ کیا گیا ہے وہ انتہائی تشویشناک ہے۔ رپورٹ میں ہندستانی نوجوان نسل کو سہولتوں کے فقدان کے علاوہ شرح اموات کا تذکرہ بھی موجود ہے۔ جو کہ اس بات کی سمت اشارہ کر رہا ہے کہ ہندستانی نوجوان نسل کو غذائی تنگی کا بھی سامنا ہے اور پیدا ہونے والے بچوں کی حالت بھی انتہائی ناگفتہ بہ ہوتی جا رہی ہے۔ آکسفورڈ کی اس ٹیم نے جو مطالعہ کیا ہے نے اپنی تجاویز UNOکو روانہ کی ہیں اور ان میں والدین‘ شہریوں ‘ سرپرستوں اور رائے دہندوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنے ممالک کے مستقبل نوجوان نسل کی بہتر پرورش پر مرکوز کریں تاکہ ملک کے مستقبل کو بہتر بنانے میں تعاون حاصل ہوسکے کیونکہ نوجوان نسل کی بہتر پرورش اور انہیں ترقی کے مواقع فراہم کرنے پر ہی ملک کی مجموعی ترقی کو ممکن بنایا جا سکتا ہے ۔آکسفورڈ یونیورسٹی کی اس مطالعاتی رپورٹ پر حکومت کو فوری متوجہ ہونے کی ضرورت ہے کیونکہ یہ حالات مزید خطرناک ہو سکتے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT