Wednesday , November 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / ہندوستان کا آج دوسرے سیمی فائنل میں بنگلہ دیش سے مقابلہ

ہندوستان کا آج دوسرے سیمی فائنل میں بنگلہ دیش سے مقابلہ

برمنگھم ۔14جون (سیاست ڈاٹ کام) دفاعی چمپئن ہندستان کو خطاب کا دفاع کرنے کے آزمائشی موڑ پر کل آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کے دوسرے سیمی فائنل میں ہمسایہ ایشیائی ٹیم بنگلہ دیش سے مقابلہ کرنے میں بڑی احتیاط برتنی ہوگی جو ہندوستان کے خلاف ایک حیران کن نتیجہ حاصل کرنے کی خواہاں ہے۔ جہاں تک ہندستانی ٹیم کا تعلق ہے تو ویراٹ کوہلی کی کپتانی میں ہندوستانی ٹیم ٹورنمنٹ کی ایک طاقتور ٹیم ہے ۔ کوہلی خود بھی پوری طرح فارم میں ہیں اورایک اہم سیمی فائنل مقابلے سے ٹھیک پہلے وہ دوبارہ آئی سی سی ونڈے درجہ بندی میں دنیا کے نمبر ایک بیٹسمین بن گئے ہیں اور اس طرح ان کا قد اور میچ سے پہلے اعتماد اور بھی بڑھ گیا ہے ۔ ٹیم انڈیا کے لئے یہ یقینا بڑے حوصلے کی بات ہے ۔ کوہلی نے بھی میچ سے پہلے کہا کہ ان کی ٹیم مقابلے پر اتری کسی بھی ٹیم کو شکست سکتی ہے ۔ ہندستان اور بنگلہ دیش دونوں ہی ایشیائی ٹیمیں ہیں ۔ بنگلہ دیش نے چونکہ اپنی کارکردگی کے بل پر سیمی فائنل تک پہنچی ہے اس لئے ہندستان کو زیادہ محتاط رہنا ہوگا۔ نیوزی لینڈ کے خلاف پانچ وکٹ کی جیت کے بعد تو بنگلہ دیشی ٹیم کا اعتماد اور بھی بڑھ گیا ہے ۔ باوجود یہ کہ نمبر ون کپتان کی قیادت میں ہندستان اپنے خطاب کا دفاع کرنے کا پوری طرح متحمل نظر آتی ہے ۔ تجربہ کار وکٹ کیپر بیٹسیمین مہندر سنگھ دھونی کی کپتانی میں 2013 میں ہندستان نے یہ خطاب جیتا تھا۔ اگرچہ ہندستان اسی ٹورنمنٹ میں پاکستان کو ایک طرفہ طور پر شکست دے چکی ہے پھر بھی بنگلہ دیش کا سامنا کرنے سے پہلے ٹیم کو اپنے کھیل میں مزید بہتری پیدا کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ دوسرے ہی میچ میں انڈر ڈاگ سری لنکا نے ہندستان کو سات وکٹوں سے شکست دی تھی۔جنوبی افریقہ کے خلاف ہندوستانی ٹیم نے فوری طور پر اپنی غلطی درست کرتے ہوئے تقریباً یک طرفہ انداز میں اسے آٹھ وکٹ سے شکست دے کر سیمی فائنل میں قدم رکھا تھا ۔ ہندستانی فاسٹ بولروں کا اس میچ میں اہم کردار تھا۔ جس بھونیشور کمار اور جسپریت بمراہ نے فی کس دو اور ہاردک پانڈیا نے ایک وکٹ حاصل کی تھی۔ ٹیم کے پاس محمد سمیع اور امیش یادو بھی اچھی اور فاسٹ بولنگ کے متحمل ہیں۔ اسپن شعبے میں بائیں ہاتھ کے اسپنر رویندر جڈیجہ سے بڑی امیدیں وابستہ ہیں۔ بولنگ میں کچھ کمیاں بھی ہیں جنہیں دور کرنے کی ضرورت ہے ۔پاکستان اور سری لنکا کے بیٹسمینوں نے ان کمیوں کا فائدہ اٹھا یا تھا۔10 اوورز میں بالترتیب 51 اور44 رنز بن گئے تھے ۔ جنوبی افریقہ کو ہندوستانی بیٹسمینوں نے ایسا کوئی موقع نہیں دیا پھر بھی بنگلہ دیش کے ساتھ کھیلتے ہوئے محتاط رہنا ہوگا ۔ اس ہمسائے کے پاس اچھے بیٹسمینس ہی نہیں ان کی ترتیب بھی اچھی ہے ۔ دیکھنا ہے کل کے اہم میچ میں آف اسپنر روی چندرن اشون کو موقع ملتا ہے یا ان کی جگہ فاسٹ بولر امیش کو جگہ دی جاتی ہے جنہوں نے پریکٹس میچ میں بنگلہ دیش کو16 رنز پر تین جھٹکے دیئے تھے ۔ بھونیشور نے بھی تین وکٹ لئے تھے۔ ٹورنامنٹ سے پہلے ہندستان اور بنگلہ دیش کے درمیان پریکٹس میچ میں ہندوستانی ٹیم نے 324 رن کا بڑا اسکور کھڑا کیا تھا جس کے تعاقب میں بنگلہ دیشی ٹیم صرف84 رنز پر ہی ڈھیر ہو گئی تھی۔ اس میچ کو ہندستان نے240 رنز سے جیتا تھا۔ کل کے مقابلے میں ہندستان کو جہاں نیوزی لینڈ کے ساتھ بنگلہ دیش کا مظاہرہ کے پیش نظر محتاط رہنا ہوگا وہیں پریکٹس میچ کا بنگلہ دیش پر بھی نفسیاتی اثر ضرور رہے گا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT