Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / ہندوستان کو برکس ممالک سے سرمایہ کاری مطلوب

ہندوستان کو برکس ممالک سے سرمایہ کاری مطلوب

ریلوے، دفاع، انشورنس، کوئلہ، انفراسٹرکچر کے شعبوں میں زبردست مواقع : سشما سوراج
ماسکو ۔ 20 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان نے آج برکس کے شراکت داروں سے اپیل کی کہ اس کے نمایاں پروگراموں بشمول ’میک ان انڈیا‘ اور ’اِسکل انڈیا‘ میں سرمایہ کاری کریں اور ساتھ ہی اس گروپ کے ارکان کے مابین تجارتی مشغولیت میں اضافہ کی راہ میں موجود رکاوٹوں کو دور کرنے کی پرزور حمایت کی۔ وزیرامورخارجہ سشماسوراج نے برکس (برازیل، روس، ہندوستان، چین اور جنوبی افریقہ) کے وزرائے صنعتیں کی میٹنگ سے خطاب میں کہا کہ حکومت نے کارپوریٹ ٹیکسوں کو گھٹانے کیلئے واضح خاکہ پیش کردیا ہے اور یہ کہ ہندوستان میں تجارت اور سرمایہ کاری کیلئے زبردست مواقع موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے اوسط مدتی ترقی کے امکانات میں کئی پالیسی اقدامات کے پیش نظر قابل لحاظ بہتری آئی ہے۔

ریلوے، دفاع اور انشورنس کے شعبوں میں ایف ڈی آئی کی حد میں نرمی لائی گئی ہے۔ کوئلہ اور کانکنی کے شعبوں میں احیاء کا رجحان دکھائی دے رہا ہے۔ ہم اشیاء اور خدمات کے ٹیکس پر عمل آوری کیلئے قطعی مہلت کے سلسلہ میں کام کررہے ہیں۔ سشما نے کہا کہ انفراسٹرکچر میں عوامی سرمایہ کاری کے معاملہ میں بھی نئی جہت آئی ہے۔ یہ تمام عوامل مل کر برکس ممالک کی کمپنیوں کیلئے ہندوستان میں کام کرنے کیلئے وافر مواقع پیدا کرتے ہیں۔ نریندر مودی حکومت کی جانب سے کئے گئے اقدامات کو بیان کرتے ہوئے جن کا مقصد ترقی میں فروغ ہے، سشما نے کہا کہ اقتصادی طور پر تمام طبقات کو شامل کرنا اہم شعبوں میں سے ایک ہے جس کے تحت زائد از 170 ملین بینک کھاتے کھولے جاچکے ہیں اور زائد از 100 ملین ڈیبٹ کارڈ معہ انشورنس جاری کردیئے گئے ہیں۔ ہندوستان میں مینوفیکچرنگ کا شعبہ میک ان انڈیا مہم کے تحت نئے حرکیاتی انداز میں کام کررہا ہے۔ اسکل انڈیا اور ڈیجیٹل انڈیا جیسے پروگرام ہندوستان میں تجارت کیلئے ماحول سازگار بنا رہے ہیں۔ سشما نے کہا کہ 100 اسمارٹ سٹیز کا پروگرام ہندوستان میں شہری آبادی کے فروغ کو بڑھاوا دے رہا ہے اور بے مثل سرمایہ کاری و تجارتی مواقع پیدا کررہا ہے۔ وزیرامور خارجہ نے کہا کہ ہندوستان میں عالمی سرمایہ کار برادری نے ازسرنو دلچسپی دکھائی ہے اور ایک ممتاز کنسلٹنسی کا حوالہ دیا جس نے ہندوستان کو دنیا بھر میں سرمایہ کاری کیلئے پرکشش منزل قرار دیا ہے۔ ہندوستان میں 2014-15ء میں ایف ڈی آئی کا بہاؤ پہلے ہی 44 بلین امریکی ڈالر کی تاریخی بلندی تک پہنچ چکا ہے۔

TOPPOPULARRECENT