ہندوستان کو مسلح ڈرونس فراہم کرنے امریکہ کی پیشکش

واشنگٹن۔19 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے ہندوستان کو مسلح ڈرونس فراہم کرنے کی پیشکش کی ہے جس کے نتیجے میں خطے میں طاقت کا توازن بگڑنے کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔یہ ڈرونس جاسوسی کے ساتھ ساتھ دشمن کو ہلاک کرنے کے بھی کام آسکتے ہیں۔امریکہ نے ہندوستان کو ہتھیاروں سے لیس بڑے ’نگراں‘ ڈرون فروخت کرنے کی پیشکش کی ہے۔ پہلے تو امریکہ نے ہندوستان کو غیر مسلح ڈرون دینے کا فیصلہ کیا تھا جنہیں صرف جاسوسی اور نگرانی کے لیے استعمال کیا جا سکتا تھا۔ تاہم اب نامعلوم وجوہات کی بنا پر ان ڈرونز کو مسلح حالت میں فراہم کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔اگر سودا طئے پاگیا تو یہ طیارے جنوبی ایشیا میں اپنی نوعیت کے پہلے ہائی ٹیکنالوجی ڈرونس ہوں گے جو کسی اور ملک کے پاس نہیں۔ جبکہ خطے میں پاکستان اور ہندوستان کے درمیان کشیدگی پہلے ہی موجود ہے۔امریکہ نے اب تک نیٹو کے سوا کسی ملک کو یہ مسلح ڈرون فروخت نہیں کیے ہیں اور ہندوستان اس ٹیکنالوجی کو حاصل کرنے والا پہلا غیر نیٹو ملک ہوگا۔ اس سودے میں صرف ایک انتظامی رکاوٹ حائل ہے کہ امریکہ کا مطالبہ ہے کہ ہندوستان کو ایک مواصلاتی معاہدے (کمیونی کیشنز کمپیٹ ایبیلٹی اینڈ سیکیورٹی ایگریمنٹ) پر دستخط کرنے ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT